نئی حکومت فلسطین کے ساتھ کام کرنے امریکہ تیار

واشنگٹن 4 جون (سیاست ڈاٹ کام) امریکہ نے آج نئی متحدہ حکومت فلسطین کے قیام کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہاکہ وہ اِس کے ساتھ تعاون و اشتراک کے لئے تیار ہے۔ جبکہ اُس کی ہیئت ترتیبی اور پالیسیوں کا تخمینہ کیا جائے گا۔ صدر فلسطین محمود عباس نے ایک عبوری ٹیکنو کریٹک حکومت قائم کی ہے جس میں اس سے الحاق رکھنے والی حماس کے وزراء کو ہنوز شامل نہیں کی

واشنگٹن 4 جون (سیاست ڈاٹ کام) امریکہ نے آج نئی متحدہ حکومت فلسطین کے قیام کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہاکہ وہ اِس کے ساتھ تعاون و اشتراک کے لئے تیار ہے۔ جبکہ اُس کی ہیئت ترتیبی اور پالیسیوں کا تخمینہ کیا جائے گا۔ صدر فلسطین محمود عباس نے ایک عبوری ٹیکنو کریٹک حکومت قائم کی ہے جس میں اس سے الحاق رکھنے والی حماس کے وزراء کو ہنوز شامل نہیں کیا گیا ہے۔ درحقیقت کابینہ کی بیشتر کلیدی وزارتیں مخلوعہ رکھی گئی ہیں جن میں وزیراعظم، دو نائب وزرائے اعظم اور وزیر فینانس بھی شامل ہیں۔ ا

مریکی محکمہ خارجہ کی نائب ترجمان ماری وہارف نے پریس کانفرنس میں کہاکہ تمام ٹیکنو کراٹس ہیں جو کسی بھی سیاسی پارٹی سے وابستہ نہیں ہے۔ وہ نئے انتخابات میں سہولت فراہم کرنے والے افراد ہیں۔ صدر محمود عباس نے واضح کردیا ہے کہ اُن کی نئی ٹیکنو کریٹک حکومت عدم تشدد، سمجھوتوں، مملکت اسرائیل کو تسلیم کرنے کی پابند ہے۔ سابقہ معاہدوں کا احترام کرے گی۔ 4 بڑی طاقتوں کے اُصولوں کی پابند رہے گی اور سابقہ بات چیت جو دو فریقین میں ہوچکی ہے اور آخرکار اسرائیل کے ساتھ صیانتی تعاون بھی جاری رکھے گی۔ ماری ہارف نے کہاکہ واضح طور پر متحدہ فلسطینی حکومت پیشرفت کررہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT