Wednesday , December 12 2018

نئی سیاسی جماعتوں سے کانگریس پریشان ‘ جانا ریڈی تلنگانہ پردیش کانگریس کے متوقع صدر

حیدرآباد 7 مارچ ( این ایس ایس ) ریاست میں سابق چیف منسٹر کرن کمار ریڈی اور تلگو فلم اسٹار پون کلیان کی جانب سے امکانی سیاسی جماعتوں کے قیام کی اطلاعتا پر کانگریس پارٹی فکرمند دکھئی دیتی ہے ۔ سیاسی حلقوں میں کہا جارہا ہے کہ نئی جماعتیں چونکہ ذات پات اور علاقہ واریت کی بنیاد پر قائم کی جا رہی ہیں ایسے میں ووٹ تقسیم ہوسکتے ہیں۔ تاہم کانگ

حیدرآباد 7 مارچ ( این ایس ایس ) ریاست میں سابق چیف منسٹر کرن کمار ریڈی اور تلگو فلم اسٹار پون کلیان کی جانب سے امکانی سیاسی جماعتوں کے قیام کی اطلاعتا پر کانگریس پارٹی فکرمند دکھئی دیتی ہے ۔ سیاسی حلقوں میں کہا جارہا ہے کہ نئی جماعتیں چونکہ ذات پات اور علاقہ واریت کی بنیاد پر قائم کی جا رہی ہیں ایسے میں ووٹ تقسیم ہوسکتے ہیں۔ تاہم کانگریس نے ریاست کی تقسیم کے بعد ہر سطح پر پارٹی کو مستحکم کرنے کی منصوبہ بندی کی ہے ۔ کانگریس پارٹی چاہتی ہے کہ اس حکمت عملی کے تحت اسے تلنگانہ اور رائلسیما میں زیادہ سے زیادہ نشستوں سے کامیابی حاصل ہوجائے ۔ اس سلسلہ میں ہائی کمان بہت جلد تلنگانہ کیلئے علیحدہ پردیش کانگریس کمیٹی کا قیام عمل میں لانی والی ہے اور سمجھا جارہا ہے کہ پردیش کانگریس کی صدارت کیلئے سابق وزیر کے جانا ریڈی کے نام کو تقریبا قطعیت دی جاچکی ہے ۔ اس سلسلہ میں ایک دو دن میں اعلان کیا جاسکتا ہے ۔ جانا ریڈی کے تقرر کے بعد بوتسہ ستیہ نارائنا صرف سیما آندھرا تک محدود ہوجائیں گے ۔ کانگریس کو امید ہے کہ جانا ریڈی کو پی سی سی کا صدر بنایا جائے تو وہ ٹی آر ایس کے ساتھ آسانی سے مفاہمت کرسکتے ہیں کیونکہ ٹی آر ایس نے پارٹی کے انضمام سے انکار کردیا ہے ۔ واضح رہے کہ کرن کمار ریڈی بھی کل اپنی سیاسی جماعت کے نام کا اعلان کرنے والے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT