Tuesday , December 11 2018

نئے سکریٹریٹ کی تعمیر کیخلاف احتجاج، ہنمنت راؤ گرفتار

حیدرآباد 19 جون (سیاست نیوز) سکریٹری اے آئی سی سی و سابق رکن پارلیمنٹ وی ہنمنت راؤ کے احتجاجی ٹینٹ کو پولیس نے اُکھاڑ دیا۔ بیانرس کو پھاڑتے ہوئے ان کے پرامن احتجاج کو ناکام بنادیا اور انھیں گرفتار کرتے ہوئے بلارم پولیس اسٹیشن منتقل کردیا۔ بیسن پولو گراؤنڈ پر نیا سکریٹریٹ تعمیر کرنے کے خلاف آج وی ہنمنت راؤ نے گراؤنڈ کے باہر صبح 10 تا شام 5 بجے تک پرامن احتجاج کرنے کا فیصلہ کیا تھا اور ایک دن قبل ہی بیگم پیٹ پولیس اسٹیشن کو اس کی اطلاع دی۔ لیکن پولیس نے آج احتجاجی دھرنا شروع ہونے سے قبل اس کو ناکام بنادیا۔ ٹینٹ اُکھاڑ دیا، بیانرس پھاڑ دیئے اور ہنمنت راؤ کے بشمول ان کے حامیوں کو گرفتار کرتے ہوئے بلارم پولیس اسٹیشن منتقل کردیا گیا اور شام 5 بجے بعد انھیں اور ان کے حامیوں کو رہا کردیا گیا۔ پولیس اسٹیشن میں ہی کیک کاٹ کر ہنمنت راؤ نے صدر کانگریس راہول گاندھی کی سالگرہ منائی اور میڈیا سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر نے ریاست کو پولیس راج میں تبدیل کردیا ہے۔ پرامن احتجاج کرنے کے جو حقوق ہے اس کو پولیس کی طاقت سے کچلا جارہا ہے۔ برسوں سکریٹریٹ نہ پہونچنے والے چیف منسٹر کو نئے سکریٹریٹ کی کیا ضرورت ہے۔ 500 کروإڑ روپئے عوامی فنڈس کو ضائع کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ وہ نئے سکریٹریٹ کے مسئلہ پر گریٹر حیدرآباد کے حدود میں اوپن بیالٹ کا انعقاد کرائے تھے۔ 98.5 فیصد نے نئے سکریٹریٹ کے خلاف ووٹ دیا۔

TOPPOPULARRECENT