Sunday , May 27 2018
Home / شہر کی خبریں / نئے شہر میں ترقی کو ترجیح ، پرانے شہر کے ساتھ سوتیلا سلوک

نئے شہر میں ترقی کو ترجیح ، پرانے شہر کے ساتھ سوتیلا سلوک

میٹرو ٹرین پراجکٹ نظر انداز ، حکومت کو انتباہ ، کل جماعتی اجلاس ، مقررین کا خطاب
حیدرآباد ۔ 24 ۔ نومبر : ( پریس نوٹ ) : پرانے شہر میں میٹرو ریل پراجکٹ شروع کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے ٹی آر ایس بھون اولڈ سٹی میں جناب راشد شریف قائد ٹی آر ایس کی زیر صدارت کل جماعتی میٹنگ منعقد ہوئی ۔ جس میں ٹی آر ایس ، کانگریس ، سی پی آئی ، سی پی ایم ، مسلم لیگ اور بی جے پی کے علاوہ دیگر کئی سماجی تنظیموں کے قائدین اور کارکن شرکت کی ۔ اجلاس میں اظہار خیال کرتے ہوئے مسٹر ای ٹی نرسمہا سکریٹری سی پی آئی گریٹر حیدرآباد نے کہا کہ میٹرو ریل کے بغیر پرانے شہر کی ترقی ناممکن ہے ۔ اس سلسلے میں گذشتہ چار سال سے جدوجہد کی جارہی ہے ۔ اب جبکہ میٹرو کا افتتاح ہونے کو ہے پرانے شہر کو یکسر نظر انداز کردیا گیا ۔ جس کے خلاف عوام میں غم اور غصہ کی لہر دوڑ گئی ہے ۔ پرانے شہر کی ترقی کے لیے عوام کو بیدار کرنے کے لیے عوام کو متحد ہونا بے حد ضروری ہے ۔ جناب راشد شریف قائد ٹی آر ایس نے کہا کہ پرانے شہر میں میٹرو کی شروعات کے لیے منصوبہ بندی کی جاچکی تھی اور اس کے لیے دارالشفاء سے فلک نما تک سروے بھی کیا گیا تھا ۔ اس کے علاوہ اس پراجکٹ سے متاثر ہونے والے علاقوں کے مکینوں نے این او سی بھی دے چکے ہیں ۔ اس کے باوجود پرانے شہر کو نظر انداز کرتے ہوئے نئے شہر کو ترقی دی جارہی ہے جو کہ پرانے شہر سے سراسر نا انصافی ہے ۔ جناب عثمان بن محمد الہاجری نے کہا کہ پرانے شہر ہی اصل حیدرآباد ہے جس میں مکہ مسجد ، چارمینار ، گولکنڈہ ، سالار جنگ میوزیم کے علاوہ دیگر کئی تاریخی عمارتیں ہیں جس کو دیکھنے کے لیے دنیا بھر سے سیاح آتے ہیں ۔ جن سے کروڑہا روپئے روزانہ حکومت کو آمدنی ہوتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پرانے شہر کی نمائندگی کرنے والی سیاسی جماعت نہیں چاہتی کہ پرانے شہر ترقی کرے۔ جس سے لاکھوں بیروزگار نوجوانوں کو روزگار فراہم ہوگا ۔ اور معاشی انقلاب آجائے گا ۔ جس سے لوگوں میں سیاسی شعور بیدار ہوگا جس کا راست نقصان موقع پرست سیاستدانوں کو ہوگا ۔ جناب محمد غوث سابق کارپوریٹر نے کہا کہ آج کے اجلاس میں تمام جماعتوں کی شرکت نے یہ ثابت کردیا کہ پرانے شہر کی ترقی کے لیے سب لوگ سنجیدہ ہیں اور تمام جماعتوں سے قائدین مل کر پرانے شہر میں میٹرو ریل کی شروعات کے لیے متحدہ جدوجہد کریں ۔ اس کے لیے ہر قسم کی قربانی کے لیے تیار رہنا ضروری ہے ۔ مسٹر بھگوت راؤ نے کہا کہ پرانے شہر کی ترقی کے لیے تمام لوگوں کو چاہئے کہ پارٹی وابستگی سے بالا تر ہو کر ترقی کے لیے مل کر کام کریں اس کے لیے جو بھی پروگرام ترتیب دیا جائے گا اس میں بی جے پی بھی شامل رہے گی ۔ جناب عبدالستار مجاہد قائد مسلم لیگ ، جناب نعیم اللہ شریف ، ڈاکٹر جاوید ، جناب عبدالستار ، جناب الیاس شمسی ، سید سرفراز حسین اور دیگر نے شرکت کی ۔ پرانے شہر حیدرآباد میں میٹرو ریل پراجکٹ کی شروعات کے لیے سیاسی جے ای سی تشکیل دی گئی ۔ جس میں جناب راشد شریف ، مسٹر بھگوت راؤ ، جناب علی مسقطی ، مسٹر ای ٹی نرسمہا ، مسٹر اے بھاسکر ، جناب عثمان بن محمد الہاجری ، جناب محمد غوث ، مسٹر راجہ رتنم ، جناب تاج الدین ، جناب سلیم الدین ، جناب ساجد شریف ، جناب روپ راج ، جناب سید حسین ، جناب سید سرفراز حسین ، مسٹر سومیا ، جناب محمد سلیم ، مسٹر ہریناتھ گوڑ ، جناب جاوید صدیقی ، جناب عبدالستار ، جناب شیخ عبداللہ سہیل ، مسٹر مانک پربھو ، جناب الیاس شمسی ، جناب آصف خاں کے علاوہ مسٹر کے سرینواس شامل ہیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT