Friday , November 24 2017
Home / شہر کی خبریں / نئے کیمپ آفسوں میں بھی واستو درست نہ رہنے کا خوف

نئے کیمپ آفسوں میں بھی واستو درست نہ رہنے کا خوف

ٹی آر ایس ارکان کی اسمبلی میں وزیر سے وضاحت طلبی ‘ شہر میں عدم فراہمی پر مجلس کا سوال
حیدرآباد ۔ 21 ۔ مارچ : ( سیاست نیوز ) : ٹی آر ایس کے ارکان اسمبلی کو ان کے لیے تعمیر کیے جانے والے کیمپ آفس میں واستو درست نہ ہونے کا خوف ہے ۔ مزید ایک روم زیادہ تعمیر کرنے کا مطالبہ کیا جارہا ہے ۔ مجلس کے رکن اسمبلی کوثر محی الدین نے حیدرآباد کے ارکان اسمبلی کے لیے کیمپ آفس تعمیر نہ کرنے کی حکومت سے وجوہات طلب کی ۔ اسمبلی میں وقفہ سوالات کے دوران ٹی آر ایس کے ارکان اسمبلی کی جانب سے کئی سوالات پوچھے گئے ایک رکن اسمبلی نے حکومت کی جانب سے ایک کروڑ روپئے کے مصارف سے تعمیر کیے جانے والے کیمپ آفس کے واستو پر سوالیہ نشان لگاتے ہوئے کہا کہ واستو ٹھیک نہ ہونے کی سوشیل میڈیا میں افواہیں گشت کررہی ہیں ۔ وزیر موصوف اس کی وضاحت کریں اور سیکوریٹی کے لیے کیا اقدامات کئے جارہے ہیں ۔ ایک کروڑ روپئے صرف تعمیرات پر خرچ کیے جائیں گے یا فرنیچر کا بھی انتظام کیا جائے گا ۔ حکومت کیمپ آفس میں مزید ایک روم اضافہ تعمیر کریں ۔ مجلس کے رکن اسمبلی کوثر محی الدین نے سارے تلنگانہ کے اسمبلی حلقوں میں ارکان اسمبلی کے لیے کیمپ آفس تعمیر کرتے ہوئے حیدرآباد کے ارکان اسمبلی کو اس سے محروم رکھنے کی حکومت سے وجہ طلب کی ۔ ریاستی وزیر عمارت و شوارع ٹی ناگیشور راؤ نے کہا کہ چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر نے ارکان اسمبلی کو عوام کے درمیان رکھنے ان کے مسائل کی عاجلانہ یکسوئی کرانے کے لیے اسمبلی حلقوں کے ہیڈکوارٹرس پر کیمپ آفس تعمیر کرنے کا فیصلہ کیا ۔ ارکان اسمبلی واستو کو لے کر خوفزدہ نہ ہو ۔ چیف منسٹر نے تمام پہلوؤں کا جائزہ لینے کے بعد ہی واستو کے مطابق کیمپ آفس تعمیر کرنے کی منظوری دی ہے ۔ حیدرآباد میں حکومت کی جانب سے ارکان اسمبلی کے لیے کوارٹرس تعمیر کیے جارہے ہیں ۔ ان کوارٹرس میں ہی حیدرآباد کے ارکان اسمبلی کے لیے علحدہ بلاکس تعمیر کیے جائیں گے ۔ حکومت تلنگانہ نے ریاست کے 104 اسمبلی حلقوں میں ارکان اسمبلی کے لیے فی کس ایک کروڑ روپئے کے مصارف سے کیمپ آفس تعمیر کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ 98 اسمبلی حلقوں میں کیمپ آفس تعمیر کرنے کے لیے ٹنڈرس طلب کرلیے گئے ۔ 88 کیمپ آفسوں کے معاہدے طئے کئے گئے ۔ 62 اسمبلی حلقوں میں تعمیری کام شروع ہوچکا ہے ۔ اسمبلی حلقہ پر کال میں کیمپ آفس تعمیر ہوچکا ہے ۔ ان کیمپ آفس کی تعمیرات پر حکومت کی جانب سے 119 کروڑ روپئے خرچ کئے جارہے ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT