نائجیریا میں بوکوحرم کیمپ سے دستیاب بموں سے 63 افراد ہلاک

پاوچی ۔ 17 جون (سیاست ڈاٹ کام) شہری خود حفاظتی جنگجوؤں کا کہنا ہیکہ ایک تھیلا بھر دیسی ساختہ بم بوکوحرم کے ایک کیمپ سے دستیاب ہوئے تھے جو انہوں نے ترک کردیا تھا۔ یہ بم دھماکہ سے پھٹ پڑے جس کی وجہ سے شمالی مشرقی نائجیریا میں 63 افراد ہلاک ہوگئے۔ گواہ ہارونا بکر نے کہا کہ شہری اس وقت طلایہ گردی کررہے تھے جبکہ انہیں ایک تھیلے میں دھاتی اشی

پاوچی ۔ 17 جون (سیاست ڈاٹ کام) شہری خود حفاظتی جنگجوؤں کا کہنا ہیکہ ایک تھیلا بھر دیسی ساختہ بم بوکوحرم کے ایک کیمپ سے دستیاب ہوئے تھے جو انہوں نے ترک کردیا تھا۔ یہ بم دھماکہ سے پھٹ پڑے جس کی وجہ سے شمالی مشرقی نائجیریا میں 63 افراد ہلاک ہوگئے۔ گواہ ہارونا بکر نے کہا کہ شہری اس وقت طلایہ گردی کررہے تھے جبکہ انہیں ایک تھیلے میں دھاتی اشیاء بھری ہوئی دستیاب ہوئیں جنہیں انہوں نے قریبی قصبہ مون گونو منتقل کردیا جہاں وہ دھماکہ سے پھٹ پڑے۔ انہوں نے کہا کہ کئی متجسس لوگ حادثہ کے مقام پر اشیاء کا معائنہ کرنے جمع ہوگئے تھے جبکہ یہ دھماکہ ہوا۔ نائجیریا کے مقامی انتہاء پسند معمول کے مطابق اپنے حملوں میں ترقی یافتہ دھماکو آلات استعمال کرتے ہیں۔ بوکوحرم نے شمال مشرقی نائجیریا کے وسیع علاقہ پر قبضہ کرلیا تھا لیکن جاریہ سال کثیر قومی فوج نے انہیں قصبوں اور دیہاتوں سے نکال باہر کیا۔ نائجیریا کی فوج کے بموجب انتہاء پسند اب سمدیسا جنگل تک محدود ہوگئے ہیں۔ بم حملے کرنا اور مارو اور بھاگو قسم کے حملے اب بھی جاری ہیں۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT