Saturday , January 20 2018
Home / Top Stories / نائجیریا کے بس اسٹیشن میں طاقتور دھماکہ ، 71 ہلاک

نائجیریا کے بس اسٹیشن میں طاقتور دھماکہ ، 71 ہلاک

ابوجا۔ 14 اپریل ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) نائجیریا کے دارالحکومت ابوجا کے مضافات میں واقع بس اسٹیشن کو صبح کے وقت جب کہ یہاں مسافرین کا اژدھام تھا ، بم حملے کا نشانہ بنایا گیا ۔ اس کے نتیجے میں 71 افراد ہلاک اور 124 زخمی ہوگئے ۔ صدر نے اس حملے کیلئے اسلام پسند بوکو حرام کو مورد الزام قرار دیا ہے ۔ اس دھماکے نے ابوجا کے جنوب میں واقع نینیا بس اسٹی

ابوجا۔ 14 اپریل ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) نائجیریا کے دارالحکومت ابوجا کے مضافات میں واقع بس اسٹیشن کو صبح کے وقت جب کہ یہاں مسافرین کا اژدھام تھا ، بم حملے کا نشانہ بنایا گیا ۔ اس کے نتیجے میں 71 افراد ہلاک اور 124 زخمی ہوگئے ۔ صدر نے اس حملے کیلئے اسلام پسند بوکو حرام کو مورد الزام قرار دیا ہے ۔ اس دھماکے نے ابوجا کے جنوب میں واقع نینیا بس اسٹیشن کو دہلادیا اور کئی گاڑیاں تباہ ہوگئیں جب کہ انسانی اعضاء ٹرمنل کے آس پاس بکھرے پڑے تھے ۔ یہ دھماکہ مقامی وقت کے مطابق 6:45 بجے صبح کیا گیا ۔ نائجیریا کے وفاقی دارالحکومت جس میں ابوجا اور اطراف و اکناف کا علاقہ شامل ہے پہلی مرتبہ اس قدر تباہ کن حملے کا نشانہ بنایا گیا ۔ عہدیداروں نے قبل ازیں کہا تھا کہ بس اسٹیشن کے احاطہ میں دو علحدہ دھماکے ہوئے ہیں لیکن بعد میں وضاحت کی گئی کہ صرف ایک ہی بم دھماکے میں اس قدر بڑے پیمانے پر تباہی ہوئی ہے ۔ نیشنل ایمرجنسی مینجمنٹ ایجنسی کے سربراہ چارلس اتیق بیڈ نے بتایا کہ دھماکو مادے سے لدی گاڑی اسٹیشن کے اندر پارک کی گئی تھی ۔ نیشنل پولیس ترجمان فرینک با نے مہلوکین کی تعداد 71 اور زخمیوں کی تعداد 124 بتائی ۔ صدر گڈلک جوناتھن نے مقام دھماکہ کا دورہ کیا اور کہا کہ نائجیریا اس باغیانہ روش پر جو بوکوحرام نے شروع کی ہے جلد قابو پالے گا ۔ انھوں نے 2009 سے ملک کے شمال اور وسطی علاقہ میں ہزاروں ہلاکتوں کے لئے بوکو حرام کو ذمہ دار قرار دیا ۔ انھوں نے کہا کہ ایسے وقت جب کہ ہم ترقی کی راہ پر تھے بوکو حرام ہمارے لئے ایک اہم مسئلہ بن گیا ہے لیکن یہ رکاوٹ عارضی ہوگی ۔

TOPPOPULARRECENT