Saturday , December 16 2017
Home / جرائم و حادثات / نابالغ بچوں کو بیڑیاں، بچوں کے حقوق کی خلاف ورزی

نابالغ بچوں کو بیڑیاں، بچوں کے حقوق کی خلاف ورزی

پولیس اپل کی حرکت کا ویڈیو وائرل، بچوں کے حقوق تحفظ تنظیموں کا احتجاج
حیدرآباد۔/13اکٹوبر، ( سیاست نیوز) فرینڈلی اور کمیونٹی پولیسنگ کی دوڑ میں پولیس ایسا لگتا ہے کہ قوانین کی پرواہ کرنے کے موقف میں نہیں ہے۔ ایک ایسا ہی واقعہ آج راچہ کنڈہ کے اپل پولیس حدود میں پیش آیا جہاں نابالغ لڑکوں کو پولیس تحویل میں رکھنے کے ساتھ ساتھ خطرناک مجرموں جیسا سلوک کرتے ہوئے انہیں بیڑیاں ڈالی گئیں اور عوامی، سماجی اور بچوں کے حقوق کیلئے سرگرم تنظیموں نے پولیس عہدیداروں کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا۔ بتایا جاتا ہے کہ اپل پولیس نے تلاشی مہم کے دوران مشتبہ انداز میں نقل و حرکت دیکھ کر ایک موٹر سیکل کو روکا۔ پولیس میٹرو اسٹیشن اپل کے قریب تلاشی میں مصروف تھی۔ اس موٹر سیکل کو روکنے کے بعد پولیس نے دستاویزات طلب کئے۔ اور یہ لوگ دستاویزات کو پیش کرنے کے بجائے مقام سے فرار ہونے کی کوشش کررہے تھے کہ پولیس نے انہیں پکڑلیا اور دوران تفتیش 25سالہ پی سرینواس ریڈی ساکن حیات نگر جو نابالغ لڑکوں کو اپنے ساتھ لے جارہا تھا اس نے اپنا جرم قبول کرلیا۔ پولیس نے ان کے قبضہ سے 9 گاڑیاں بشمول موٹر سیکلیں جن کی مالیت 5لاکھ روپئے بتائی گئی ہے کوضبط کرلیا۔ تاہم اس واقعہ میں پولیس اپل پر الزام ہے کہ اس نے بچوں کے حقوق کی خلاف ورزی کی ہے اور نابالغ کے ناموں کو افشاء بھی کیا ہے۔ اسسٹنٹ کمشنر پولیس ملکاجگیری ڈیویژن راچہ کنڈہ کی جانب سے جاری کردہ بیان میں ان دو کمسن بچوں کے نام کا بھی ذکر کیا گیاہے۔ جبکہ انہیں پولیس اسٹیشن میں محروس رکھے گئے انداز کی تصاویر سوشیل میڈیا پر وائرل ہوچکی ہے ۔ اس سلسلہ میں بچوں کے حقوق کیلئے سرگرم تنظیم بالالہ ہکولہ سنگم کے صدر مسٹر اجوت راؤ نے اس واقعہ پر افسوس ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ پولیس اپل نے نہ صرف بچوں کے حقوق کی خلاف ورزی کی ہے بلکہ سپریم کورٹ کے رہنمایانہ خطوط کو بھی نظرانداز کیاہے۔ انہوں نے پولیس کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا۔

TOPPOPULARRECENT