ناجائز قبضہ جات کو باقاعدہ بنانے جی او کیخلاف کل احتجاج

ہزارہا افراد کی شرکت متوقع، گریٹر حیدرآباد ریزیڈنٹس و دیگر اسوسی ایشن کا اعلان

ہزارہا افراد کی شرکت متوقع، گریٹر حیدرآباد ریزیڈنٹس و دیگر اسوسی ایشن کا اعلان
حیدرآباد ۔ 21 فبروری (سیاست نیوز) حکومت تلنگانہ کی جانب سے سرکاری اراضیات پر قابض ناجائز قابضین کی اراضیات کو مستقل اور باقاعدہ بنانے سے متعلق جاری کئے گئے (G.O.59) کے خلاف گریٹر حیدرآباد ریسیڈنٹس فورم اور فیڈریشن آف اسوسی ایشنس آف کالونیز اینڈ اپارٹمنٹس کے زیراہتمام 23 فبروری پیر کو 11 بجے دن سی سی ایل اے آفس واقع عابڈس کے روبرو بڑے پیمانے پراحتجاجی پروگرام منظم کیا جائے گا جس میں شہر سے تعلق رکھنے والے ہزاروں افراد حصہ لیں گے۔ یہ بات آج یہاں سٹی سکریٹری گریٹر حیدرآباد ریسیڈنٹس فورم مسٹر جے کمارا سوامی منعقدہ پریس کانفرنس کے دوران بتائی۔ انہوں نے کہا کہ حکومت (G.O.59) کے ذریعہ سرکاری اراضیات کو مستقل اور باقاعدہ بنانے کے بہانے سرکاری خزانہ کو بھرنے کی کوشش کررہی ہے جس کی ریاست تلنگانہ کے عوام بھرپور مخالفت کررہے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ مذکورہ جی او کے نتیجہ میں عوام پر بھاری بوجھ عائد ہورہا ہے اور غریب اور متوسط طبقہ کے عوام اراضیات کو مستقل بنانے سے متعلق عائد کردہ رقومات کو ادا کرنے کے قابل نہیں ہیں۔ انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ فوری طور پر اراضیات کو مستقل اور باقاعدہ بنانے کیلئے برائے نام قیمت لے۔ اس موقع پر فاکاسٹی سکریٹری مسٹر یو اے نارائنا، جی ایچ آر ایف سٹی نائب صدر مسٹر اے سرینواس، جی ایچ آر ایف اوپل کمیٹی اعزازی صدر پروفیسر وینکٹیشورلو بھی موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT