ناقص مظاہرہ پر ہرمن پریت اور متھالی کی COA کی جانب سے طلبی

نئی دہلی۔ 25 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) انگلینڈ کے خلاف ٹی 20 سیمی فائنل میں غلطیوں اور متنازعہ بھول چوک پر کمیٹی آف ایڈمنسٹریٹر نے ہندوستانی کپتان ہرمن پریت سنگھ اور متھالی راج کو جواب طلبی کیلئے مدعو کیا ہے۔ ہندوستانی ویمنس ٹیم کو آئی سی سی ٹورنمنٹ میں آخری کے چار میچس میں بدترین ہزیمت کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ بی سی سی آئی کے ایک اعلیٰ عہدیدار کے مطابق متھالی راج اپنی وضاحت بذریعہ تحریر جنرل مینیجر کرکٹ آپریشن صباء کریم کو روانہ کرے گی جو ویمنس کرکٹ ٹیم کے انچارج بھی ہیں۔ بی سی سی آئی عہدیدار جنہوں نے اپنے نام کو راز میں رکھنے کی شرط پر کہا کہ COA اور کھلاڑیوں کے درمیان بہت جلد ایک میٹنگ بلائی جائے گی اور متھالی راج کی سنجیدہ غلطیوں کی وجوہات معلوم کی جائے گی۔ اس سلسلے میں کمیٹی میتھالی راج اور ہرمن پریت سے علیحدہ علیحدہ بات کرے گی اور اس کے علاوہ کمیٹی ٹیم کی ناقص کارکردگی پر کوچ رمیش پوار، مینیجر ترپتی بھٹا چاریہ اور سلیکٹر سدھا شاہ سے بھی تبادلہ خیال کرے گی۔ COA چیف ونود راج نے ٹیم کے انتخاب بعض گوشوں سے تنقیدوں پر سخت برہمی کا اظہار کیا ہے۔ خاص طور پر وہ افراد جو انڈین ویمنس ٹیم سے متعلق ہیں، ان کے غیرذمہ دارانہ بیانات سے وہ ناراض ہیں۔ ونود رائے نے خاص طور پر اس تبصرہ پر سخت ناراضگی کا اظہار کیا ہے جو ایک خاتون انیشا گپتا کی جانب سے ٹوئٹر پر کیا گیا۔ انیشا گپتا جو اپنے آپ کو فری لانس اسپورٹس ایجنٹ اور متھالی کی جانب سے تصدیق شدہ خاتون ہیں۔ اپنے ٹوئٹ میں جو بعد میں حذف کردیا گیا۔ تحریر کیا تھا کہ ’’ہرمن پریت دھوکہ باز، قریبی اور غیرپسندیدہ کھلاڑی ہے‘‘۔ رائے نے ان افراد جو کرکٹ سے جڑے ہوئے ہیں، درخواست کی کہ وہ اپنے اپنے پروٹوکول کا خیال رکھیں اور غیرضروری بیانات سے احتراز کریں کیونکہ اس سے ٹیم کی حوصلہ شکنی ہوگی۔

TOPPOPULARRECENT