Tuesday , September 25 2018
Home / شہر کی خبریں / نامزد عہدوں کیلئے مزید انتظار کے مشورہ پر ٹی آر ایس قائدین میں ناراضگی

نامزد عہدوں کیلئے مزید انتظار کے مشورہ پر ٹی آر ایس قائدین میں ناراضگی

حیدرآباد ۔ 4 ۔ فروری(سیاست نیوز) مختلف سرکاری اداروں نے نامزد عہدوں کے خواہشمند ٹی آر ایس قائدین کو اس وقت مایوسی کا سامنا کرنا پڑا جب چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ نے پارٹی کے توسیع اجلاس میں عہدہ کے خواہشمندوں کو مزید انتظار کا مشورہ دیا ۔ چیف منسٹر کی جانب سے کل اس سلسلہ میں دی گئی نصیحت سے پارٹی کے ہاتھوں میں مایوسی صاف طور پر دکھائی د

حیدرآباد ۔ 4 ۔ فروری(سیاست نیوز) مختلف سرکاری اداروں نے نامزد عہدوں کے خواہشمند ٹی آر ایس قائدین کو اس وقت مایوسی کا سامنا کرنا پڑا جب چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ نے پارٹی کے توسیع اجلاس میں عہدہ کے خواہشمندوں کو مزید انتظار کا مشورہ دیا ۔ چیف منسٹر کی جانب سے کل اس سلسلہ میں دی گئی نصیحت سے پارٹی کے ہاتھوں میں مایوسی صاف طور پر دکھائی دے رہی ہے۔ پارٹی کے ہیڈکوارٹر تلنگانہ بھون اور سکریٹریٹ میں وزراء کے چیمبرس میں چیف منسٹر کے مشورہ پر قائدین کو تبصرہ کرتے ہوئے دیکھا گیا۔ تلنگانہ بھون میں موجود کئی قائدین نے چیف منسٹر کی جانب سے کی گئی نصیحت پر حیرت کا اظہار کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ عہدوں کے خواہشمندوں کو مزید انتظار کے مشورہ سے پارٹی کی تنظیمی سرگرمیاں اور رکنیت سازی کا عمل متاثر ہوسکتا ہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ چیف منسٹر اس موضوع پر اظہار خیال کے بغیر بھی تقریر کرسکتے تھے ۔ بعض قائدین جو چیف منسٹر کے کٹر حامیوں میں شمار کئے جاتے ہیں،

ان کی رائے تھی کہ دراصل رکنیت سازی میں پارٹی قائدین کے رول کا جائزہ لینے کیلئے چیف منسٹر نے سرکاری عہدوں پر تقررات کے عمل کو موخر کردیا ہے۔ وہ پارٹی کے استحکام کے سلسلہ میں قائدین کی سنجیدگی کا جائزہ لینا چاہتے ہیں۔ واضح رہے کہ چیف منسٹر نے پارٹی کی ریاستی کمیٹی کے علاوہ اضلاع کی کمیٹیاں اور محاذی تنظیموں کو بھی تحلیل کردیا ہے۔ ان کی جگہ اسٹیرنگ کمیٹیاں تشکیل دی جائیں گی جو رکنیت سازی اور تنظیمی انتخابات کی نگرانی کریں گی۔ مواضعات کی سطح سے ریاستی سطح تک تنظیمی انتخابات کا عمل اپریل میں مکمل ہوگا، لہذا سرکاری عہدوں پر تقررات کیلئے قائدین کو مزید دو ماہ تک انتظار کرنا پڑسکتا ہے۔ ٹی آر ایس سے تعلق رکھنے والے اقلیتی قائدین بھی آج کافی مایوس دیکھے گئے۔ اقلیتی قائدین مختلف اقلیتی اداروں کے عہدہ کیلئے زبردست دوڑ دھوپ کر رہے ہیں۔ بتایاجاتا ہے کہ چیف منسٹر نے اقلیتی اداروں کے اہم عہدوں کے سلسلہ میں اپنے قریبی رفقاء سے مشاورت کا عمل مکمل کرلیا ہے۔ تاہم اعلان کیلئے اقلیتی قائدین کو دیگر اداروں کی طرح مزید انتظار کرنا پڑے گا۔

TOPPOPULARRECENT