Monday , November 20 2017
Home / ہندوستان / ناوابستہ تحریک کی چوٹی کانفرنس کا ونیزویلا میں انعقاد

ناوابستہ تحریک کی چوٹی کانفرنس کا ونیزویلا میں انعقاد

نائب صدر جناب حامد انصاری کی شرکت کیلئے روانگی ۔ اہم مسائل پر غور کئے جانے کا امکان
نئی دہلی 15 ستمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) نائب صدر جمہوریہ حامد انصاری آج ونیزویلا روانہ ہوگئے جہاں وہ ناوابستہ تحریک کی 17 ویں چوٹی کانفرنس میں شرکت کرینگے ۔ اس کانفرنس میںدہشت گردی ‘ اقوام متحدہ اصلاحات ‘ ماحولیاتی تبدیلی اور نیوکلئیر ترک اسلحہ جیسے مسائل پر تبادلہ خیال کیا جاسکتا ہے ۔ جناب حامد انصاری وزیر اعظم نریندر مودی کی بجائے اس کانفرنس میں ہندوستانی وفد کی قیادت کر رہے ہیں۔ مودی اس کانفرنس میں شرکت سے گریز کرنے والے دوسرے وزیر اعظم ہند ہیں ۔ اس سے قبل 1979 میں چرن سنگھ نے بھی اس کانفرنس میں شرکت سے گریز کیا تھا ۔ یہ کانفرنس منگل کو شروع ہوئی اور 18 ستمبر کو ختم ہوگی ۔ اس میں تین سطح کے اجلاس ہونگے ۔ ایک عہدیداروں کی سطح کا اجلاس ہوگا دوسرا وزرائے خارجہ کی سطح کا اجلاس ہوگا اور پھر سربراہان مملکت و حکومت کی چوٹی کانفرنس ہوگی ۔ منسٹر آف اسٹیٹ خارجہ ایم جے اکبر پہلے ہی اس کانفرنس میںشرکت کیلئے ونیزویلا پہونچ چکے ہیں جبکہ جناب حامد انصاری برلن میں رات میں توقف کرنے کے بعد کل وہاں پہونچیں گے ۔ وزارت خارجہ کے بموجب اس کانفرنس میں امکان ہے کہ آج کے دور میں درپیش اہم مسائل جیسے دہشت گردی ‘ اقوام متحدہ اصلاحات ‘ مغرب ایشیا کی صورتحال ‘ امن و سلامتی کو درپیش خطرات پر تبادلہ خیال کیا جاسکتا ہے ۔

اقوام متحدہ کی قیام امن کارروائیوں ‘ ماحولیاتی تبدیلی ‘ مستحکم ترقی ‘ معاشی حکمرانی ‘ پناہ گزین اور تارکین وطن کے مسائل اور نیوکلئیر ترک اسلحہ پر بھی اس کانفرنس میں غور کیا جاسکتا ہے ۔ مارگریٹا میں ہونے والی اس ناوابستہ تحریک کی چوٹی کانفرنس کے ذریعہ امکان ہے کہ دنیا کے 120 ترقی پذیر ممالک کے حکمران یہاں جمع ہونگے جو اس تحریک کے ارکان ہیں۔ ناوابستہ تحریک کی چوٹی کانفرنس کو دنیا میں ہونے والی بڑی کانفرنسوں میں شمار کیا جاتا ہے جس میں کئی ممالک کے قائدین اور حکمران شرکت کرتے ہیں۔ وزارت خارجہ کے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ ناوابستہ تحریک ترقی پذیر ممالک کے اجتماعی مفادات کو آگے بڑھانے کیلئے مسلسل کام کرتی ہے اور وہ اصلاحات کی قائل بھی ہے ۔ وہ چاہتی ہے کہ مختلف عالمی گروپس کے علاوہ اقوام متحدہ میں بھی اصلاحات نافذ کی جانی چاہئیں۔ بیان کے بموجب ناوابستہ تحریک کئی اہم مسائل جیسے عالمی معاشی نظام ‘ ترک اصلحہ اور اقوام متحدہ قیام امن کی کوششوں میں اپنا کافی اثر و رسوخ رکھتی ہے ۔ چوٹی کانفرنس کے آغاز کے موقع پر منگل کو ونیزویلا کے وزیر خارجہ نے نے کہا تھا کہ یہ تحریک دنیا بھر کے عوام کی امن و سلامتی کیلئے جدوجہد کریگی ۔

TOPPOPULARRECENT