Tuesday , January 23 2018
Home / شہر کی خبریں / ناپ تول میں ہیرا پھیری ، بٹوں میں چوری

ناپ تول میں ہیرا پھیری ، بٹوں میں چوری

ایک کیلو میوہ یا سبزی کی خریدی پر صرف 800 گرام کا حصول ، سرکاری محکمہ کیا کررہا ہے ؟ صارفین کا سوال

ایک کیلو میوہ یا سبزی کی خریدی پر صرف 800 گرام کا حصول ، سرکاری محکمہ کیا کررہا ہے ؟ صارفین کا سوال
حیدرآباد ۔ 25 ۔ اگست : ( سیاست نیوز) : شہر کے کسی بھی مقام پر اگر آپ میوے یا ترکاری کی خریداری کریں تو اس بات کا خیال ضرور رکھیں کہ میوہ یا ترکاری فروش تول میں چوری نہ کرسکیں ۔ اس لیے کہ آج کل شہر کے بیشتر مقامات پر میوہ فروش اور سبزی فروش اپنی بنڈیوں میں ناپ تول کے لیے جو وزن یا بٹ رکھتے ہیں اس میں زبردست ہیرا پھیری ہوتی ہے ۔ مثال کے طور پر اگر آپ ایک کیلو جام ، انگور ، دیگر میوے جات یا پھر ادرک لہسن وغیرہ خریدتے ہیں تو ہمیں یقین ہے کہ کم از کم 70 فیصد بیوپاری تول کے معاملے میں دیانت داری کا مظاہرہ نہیں کرتے بلکہ بھولے بھالے صارفین کو ایک طرح سے ٹھگ لیتے ہیں انہیں ایک کیلو کے بجائے 800 تا 900 گرام میوے یا سبزی دئیے جاتے ہیں ۔ راقم الحروف نے اس سلسلے میں شہر کے مختلف مقامات کا جائزہ لیا ۔ معظم جاہی مارکٹ پر تجرباتی طور پر جام خرید کر بھی دیکھا ۔ بنڈی پر جام فروخت کرنے والے میوہ فروش نے جو ایک مخصوص طبقہ سے تعلق رکھتا ہے ایک کیلو کی بجائے صرف 700 گرام جام دئیے ہم نے اس کے بٹ کو الٹا پلٹا کر دیکھا تو وہ پریشان ہوگیا اور کہا کہ ’ صاحب آپ کو میں کچھ زیادہ جام دیتا ہوں وزن میں کمی زیادتی ہوسکتی ہے ۔ اس کے بٹ کے پچھلے حصہ میں دیکھنے پر پتہ چلا کہ محکمہ اوزان و پیمائش کی سیل ( مہر ) بھی نہیں ہے جب کہ بٹ کو کھرچ کھرچ کر اس کا وزن کم کردیا گیا ہے ۔ اس واقعہ کے بعد ہم نے ایک کیلو کا بٹ خریدا اور مختلف مقامات پر سروے کرنا شروع کردیا ۔ بیشتر مقامات پر اس بٹ اور میوہ و سبزی فروشوں کے بٹ میں کم از کم 100 تا 200 گرام کا فرق دیکھا گیا ۔ جن بٹوں ( وزن ) میں ہیرا پھیری کی گئی وہ دراصل جمعرات بازار سے خریدے گئے ہیں ۔ واضح رہے کہ عثمان گنج میں وزن کے الیکٹرانک ترازو اور عام قسم کے بٹ ملتے ہیں وہاں کے ایک تاجر نے بتایا کہ صارفین کو دھوکہ دینے کے لیے بعض کاروباری ترازو کے نیچے مقناطیس لگا دیتے ہیں ۔ عثمان گنج میں 500 گرام کے اصلی یعنی کسی ہیرا پھیری سے پاک بٹ کی قیمت 60 روپئے ہے ایک کیلو گرام کا بٹ 80 روپئے میں دستیاب ہوگا ۔ 2 کیلو کے بٹ کی قیمت 150 روپئے ، 5 کیلو گرام بٹ کی قیمت 300 روپئے اور 10 کیلو گرام بٹ کی 500 روپئے ہے اور ان پر باضابطہ محکمہ اوزان وپیمائش کی مہر ثبت ہوتی ہے ۔ دلچسپی کی بات یہ ہے کہ ہمیں اس گوشت کی دکان والے سے بھی مایوسی ہوئی جن کے بارے میں ہم مثبت تاثر رکھتے تھے لیکن ان کے بٹ میں بھی 100 گرام کا فرق پایاگیا ۔ اس بارے میں ان بے چاروں کا کہنا ہے کہ مسلسل استعمال کے باعث یہ بٹ گھس گیا ہے اگر ایسا ہے تو انہیں یہ بٹ فوری تبدیل کردینا چاہئے تھا ۔ بہر حال ناپ تول میں ہیرا پھیری کے بڑھتے رجحان کے لیے محکمہ اوزان و پیمائش کو بھی ذمہ دار ٹھہرایا جارہا ہے ۔ دیانت دار تاجرین کا کہناہے کہ اس محکمہ کے عہدیدار اچانک بنڈیوں اور دکانات کا معائنہ کرتے ہیں تو اس سے اصلی اور نقلی بٹ ( وزن ) کا فیصلہ ہوجاتا اور صارفین لالچی و بددیانت افراد کا شکار ہونے سے بچ جاتے ۔۔

TOPPOPULARRECENT