Thursday , December 14 2017
Home / ہندوستان / ناگپور میں ’’گاؤدہشت گردوں ‘‘ کی کارروائی

ناگپور میں ’’گاؤدہشت گردوں ‘‘ کی کارروائی

بی جے پی کی حلیف شیوسینا اور اپوزیشن پارٹیوں کی جانب سے واقعہ کی مذمت
ممبئی 13 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) برسر اقتدار مخلوط حکومت مہاراشٹرا میں شامل شیوسینا اور اپوزیشن پارٹیوں کانگریس اور این سی پی نے آج ضلع ناگپور میں واقعہ کی مذمت کی جس میں ایک شخص کو مبینہ طور پر بعض افراد نے زدوکوب کیا تھا۔ کیوں کہ اُس شخص پر بیف منتقل کرنے کا شبہ تھا۔ اِس کے برعکس بی جے پی نے اِس کی اہمیت کم کرنے کی کوشش کرتے ہوئے اُسے ایک منتشر واقعہ قرار دیا۔ شیوسینا کے ترجمان نے کہاکہ اب کہا جاسکتا ہے کہ وزیراعظم نے گاؤ رکھشکوں کو انتباہ دیا تھا لیکن اِس کے باوجود اُنھوں نے اِسے نظرانداز کردیا۔ اِس کے پیچھے اُن کا کونسا مقصد ہے۔ کیا وہ مودی حکومت کی ناکامیوں کی طرف سے عوام کی توجہ ہٹانا چاہتے ہیں۔ امرناتھ یاترا پر حملہ کرکے دہشت گردوں نے کئی افراد کو ہلاک کردیا لیکن حکومت کچھ نہ کرسکی۔ سینا قائد نے کہاکہ مہاراشٹرا کو کُل وقتی وزیرداخلہ کی ضرورت ہے۔ فی الحال چیف منسٹر دیویندر فرنویس دیگر وزارتوں کے ساتھ وزارت داخلہ کا بھی قلمبند سنبھالے ہوئے ہیں۔ صدر پردیش کانگریس اشوک چاوان نے کہاکہ ایسے واقعات کے تسلسل سے ظاہر ہوتا ہے کہ کوئی بھی وزیراعظم کے انتباہ پر سنجیدہ نہیں ہے۔ کانگریس مانسون اجلاس میں پارلیمنٹ اور ریاستی اسمبلیوں میں یہ مسئلہ اٹھائے گی اور حکومت سے جواب طلب کرے گی۔ این سی پی کے ترجمان نواب ملک نے فرنویس سے کہاکہ وہ اِس بات کو یقینی بنائیں کہ ایسے واقعات کا اعادہ نہ ہونے پائے۔ اُنھوں نے کہاکہ گجرات اور ہریانہ کے بعد اب مہاراشٹرا کی باری ہے۔ چیف منسٹر ناگپور کے متوطن ہیں، اِس لئے اِس واقعہ کی اہمیت میں مزید اضافہ ہوگیا ہے۔ کیا چیف منسٹر اِس بات کو یقینی بنائیں گے کہ ایسے واقعات کا اعادہ نہ ہونے پائے۔ سلیم اسمٰعیل شیخ عمر 31 سال ساکن کالور قصبہ کو مبینہ طور پر چند افراد کے ہجوم نے بیف منتقل کرنے کے شبہ میں دیہات بھار سنگی میں کل رات زدوکوب کیا تھا۔ پولیس نے اِس سلسلہ میں 4 افراد کو گرفتار کرلیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT