Thursday , September 20 2018
Home / اضلاع کی خبریں / ناگی ریڈی پیٹ میں آبی اسکیم ہنوز ادھوری

ناگی ریڈی پیٹ میں آبی اسکیم ہنوز ادھوری

موسم گرما میں آبی قلت کا خدشہ،ضلع کلکٹر کے احکامات بھی بے اثر

موسم گرما میں آبی قلت کا خدشہ،ضلع کلکٹر کے احکامات بھی بے اثر

یلاریڈی 14 مارچ (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) منڈل ناگی ریڈی پیٹ کی عوام کو منجیرا ا پانی سربراہ کرنے کیلئے حکومت نے تشکیل دی گئی اسکیم کو گرہن لگ گیا ہے۔ آبی اسکیم کے کام تقریبا مکمل ہونے کے بعد آخری مرحلہ میں مخلوص کام مگر مکمل نہ ہوسکے ۔ خاص کام میں مسائل ہورہے ہے۔ ندی میں ذخیرہ آب مکمل طریقہ سے نکل جانے کے بعد 20 دنوں میں کام کرنے کا متعلقہ گتہ دار نے تیقن دیا تھا لیکن افسوس کہ فی الوقت سنگور پراجکٹ سے جاری کیا گیا آب پھر سے منجیرا ندی میں آنے والا ہے۔ یہ آب مکل طریقہ سے کم ہونے میں تقریبا چار ماہ کا عرصہ درکار ہوگا۔ جس پر پینے کے پانی کی اسکیم فی الوقت آغاز نہ ہونے پر منڈل کی عوام میں تشویش پائی جاتی ہے۔ منڈل ناگی ریڈی پیٹ کے مختلف مواضعات کے ساتھ ساتھ لنگم پیٹ کے تین گرام پنچایت حدود کی عوام کوفلورائیڈر کی مشکلات سے راحت دلانے کیلئے منجیرا کا آب سربراہ کرنے کے مقصد کو جون 2010ء میں تب کی حکومت نے 9 کرور روپئے منظور کرتے ہوئے آبی اسکیم کو منظور کیا ۔

پہلے منظور کیا گیا فنڈ ناکافی ہونے پر کچھ دنوں تک کام کا آغاز نہ کیا گیا جس کے بعد محکمہ آر ڈبلیو ایس عہدیداروں نے اس مسئلہ کو حکومت کی نظر میں لیجاکر اسکیم پر عمل آوری کیلئے ضروری چار کروڑ 60 لاکھ روپئے کا فنڈ حکومت سے زائد منظور کروایا جس سے سال 2012 ء جون میں آبی اسکیم کے کاموں کا آغاز ہوا اور گذشتہ دو سال سے زائد عرصہ کے بعد بھی پینے کے پانی کی اس اسکیم کے کام چلتے ہی جارہے ہیں۔ گذشتہ ماہ مئی میں ہی عہدیداروں نے متعلقہ گتہ دار کو آخری ماہ تک کام مکل کرنے کی مہلت دی تھی لیکن ضروری طریقوں سے کام انجام نہ دیئے جانے کی وجہ سے کئی مرتبہ معیاد بڑھانا پڑا۔ فی الوقت پینے کے پانی کی اسکیم کا کام تقریبا مکل ہونے پر بھی مخصوص ضروری کام ابھی باقی رہ گئے ہیں۔ منجیرا ندی میں تعمیر کی گئی ان فلٹریشن ویل سے اونچائی پر واقع کنکشن ویل تک درمیان میں پائپ لائن ڈالنا ہے جو ندی کے پانی کے مکمل کرنے کے بعد ہی ممکن ہے۔ تب ہی ان فلٹریشن اور کنشن ویل کے درمیان پائپ لائن ڈالی جاسکتی ہے لیکن ان دنوں سنگور پراجکٹ سے زائد آب جاری کیا گیا جو منجیرا ندی میں آئے گا اور اس پانی کی سطح کم ہو اس کیلئے چار ماہ کا وقت درکار ہوگا۔

تب تک آبی اسکیم کے یہ کام روکدینا ہوگا۔ گذشتہ 26 اکٹوبر کو ضلع کلکٹر نے منڈل کے کول لنگال شیوار میں منجیرا ندی کے پاس چل رہے کام کا معائنہ کیا جہاں پر عہدیداروں نے کلکٹر کو تیقن دیا کہ آنے والے 20 دنوں میں کام ملکمل کرلیںگے لیکن عمل آوری میں غیر ذمہ داری سے کام لینے پر عام وقت پر مکمل کرنے میں کامیاب نہ ہوسکے اور اب سنگور کا آب آنے کو ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ مالتمیدہ برقی سب اسٹیشن سے گول لنگال ندی کے قریب موجود کنکشن ویل تک ہائی ٹنشن برقی تاروں سے خصوصی برقی ٹرانسفارمر قائم کرنا ہے جو اب تک نہ کیا گیا۔ انے آولے موسم گرما میںمنڈل کی عوام کو منجیرا کا پانی تشنگی دور کرنے میسر ہونا لگ بھگ نا ممکن ہے۔ کروڑوں روپئے کی اسکیم کے ساتھ عہدیداروں کو اس طرح لاپرواہی باعث سے تشویش سے کم نہیں۔

TOPPOPULARRECENT