نبارڈ اور دیگر ترمیمی بل کو پارلیمنٹ کی منظوری

نئی دہلی 4جنوری (سیاست ڈاٹ کام )لوک سبھا نے آج دو اہم بلوں میں راجیہ سبھا کی ترامیم کو منظوری دے دی جبکہ یہ بل ایوان زیریں میں منظور کئے جاچکے تھے، جو نیشنل بینک فار اگریکلچر اینڈ رورل ڈیولپمنٹ (ترمیمی ) بِل اور انسالوینسی اینڈ بینک کرپسی کوڈ (ترمیمی) بل ہیں۔ مملکتی وزیر برائے کارپوریٹ اُمور پی پی چودھری نے یہ ترامیم پیش کئے جن کو ایوان نے ندائی ووٹ کے ذریعہ منظور کرلیا جس کے ساتھ دونوں اہم قانون سازیوں کو پارلیمنٹ کی منظوری حاصل ہوگئی۔ نبارڈ کا سرمایہ پانچ ہزار کروڑ روپے سے بڑھا کر تیس ہزا رکروڑ روپے کرنے کی توضیح سے متعلق بل کے نام میں تبدیلی اور راجیہ سبھا میں اس میں کی گئی ترامیم کو آج لوک سبھا نے منظوری دے دی۔کارپورٹ اُمور کے وزیرمملکت پی پی چودھری نے ایوان میں نبارڈ ترمیمی بل 2017میں 2017کی جگہ 2018ء کرنے کی تجویز پیش کی جسے ندائی ووٹوں سے منظور کرلیا گیا۔ اس کے بعد انہوں نے لوک سبھا میں منظورہ بل میں راجیہ سبھا کے ذریعہ کی گئی ترمیم کو تسلیم کرنے کی تجویز پیش کی جسے ندائی ووٹوں سے منظور کرلیا گیا۔

TOPPOPULARRECENT