Thursday , April 19 2018
Home / Top Stories / نتن یاہو کی آمد‘ نریندر مودی نے خود استقبال کیا

نتن یاہو کی آمد‘ نریندر مودی نے خود استقبال کیا

وزیر اعظم ہندپروٹوکول کی پرواہ کئے بغیر ائرپورٹ پہونچ گئے ۔ دونوں قائدین کی تین مورتی یادگار پر تقریب میں شرکت
نئی دہلی 14 جنوری ( سیاست ڈاٹ کام ) وزیر اعظم نریندر مودی نے پروٹوکول کی پرواہ کئے بغیر اپنے اسرائیلی ہم منصب بنجامن نتن یاہو کا ائرپورٹ پہونچ کر استقبال کیا ۔ نتن یاہو آج اپنے چھ روزہ دورہ ہندوستان پر نئی دہلی پہونچے ۔ مودی نے ائرپورٹ پر بنجامن نتن یاہو کا استقبال کیا ۔ نریندر مودی طیارہ سے اترتے ہی بنجامن نتن یاہو سے بغلگیر ہوگئے ۔ اسرائیلی وزیر اعظم اپنی اہلیہ سارہ اور ایک بڑے وفد کے ساتھ ہندوستان کے دورہ پر آئے ہیں۔ نریندر مودی نے بعد ازاں انگریزی اور عبرانی زبان میں ٹوئیٹ کرتے ہوئے کہا کہ ’’ میر یدوست ومیر اعظم نتن یاہو ‘ ہندوستان میں آپ کا خیر مقدم ہے ۔ آپ کا دورہ ہندوستان تاریخی اور خصوصی ہے ۔ اس دورہ سے دونوں ملکوں کے مابین قریبی تعلقات مزیدمستحکم ہونگے ‘‘ ۔ اس دورہ کے موقع پر دونوں قائدین کئی اہمیت کے حامل مسائل پر جامع بات چیت میں حصہ لیں گے ۔ نریندر مودی کے گذشتہ سال جولائی میں اسرائیل کے دورہ کے موع پر بھی نتن یاہو نے ان کا اسی طرح سے استقبال کیا تھا ۔ مودی نے انتہائی گرمجوشی کے ساتھ نتن یاہو سے مصافحہ کیا ‘ ان سے بغلگیر ہوئے ۔ اس موقع پر منسٹر آف اسٹیٹ خارجہ جنرل ( ریٹائرڈ ) وی کے سنگھ بھی موجود تھے ۔ اسرائیل کے سابق وزیر اعظم ایریل شیرون کے بعد کسی اسرائیلی وزیر اعظم یا یہ پہلا دورہ ہندوستان ہے ۔ ایریل شیرون نے 2003 میں ہندوستان کا دورہ کیا تھا ۔ نتن یاہو کے ساتھ 130 رکنی وفد بھی ہندوستان آیا ہے ۔ ائرپورٹ سے دونوں وزرائے اعظم کی گاڑیوں کا قافلہ سیدھے تین مورتی یادگار کیلئے روانہ ہوگیا ۔ وزیر اعظم نریندر مودی اور ان کے اسرائیلی ہم منصب بنجامن نتن یاہو نے آج ایک تقریب میں تین مورتی یادگار پر شرکت کی ۔ یہ تقریب تین مورتی چوک کو تین مورتی حیفہ چوک کے نام سے معنون کرنے منعقد ہوئی تھی ۔ دونوں قائدین نے یہاں پھول مالا چڑھائی اور یادگار پر وزیٹرس بک میں دستخط کئے ۔ نتن یاہو آج چھ روزہ دورہ پر ہندوستان پہونچے جن کا مودی نے استقبال کیا ۔ اس یادگار پر کانسہ کے تین مجسمے حیدرآباد ‘ جودھپور اور میسور لانسرس کی نمائندگی کرتے ہیں جو 15 امپیریل سرویس بریگیڈ کا حصہ تھے ۔ نتن یاہو اور نریندر مودی دونوں نے ہی تین مورتی یادگار پر وزیٹرس بک میں اپنی رائے تحریر کی اور دستخط بھی کئے ۔ ہندوستانی بریگیڈ نے 23 ستمبر 1918 کو پہلی عالمی جنگ کے دوران قلعہ بند شہر حیفہ پر کامیاب حملہ کیا تھا ۔ اس لڑائی کی کئی داستانیں ہیں اور ہر داستان میں ہندوستانی بریگیڈ کی بہادری کی کہانیاں موجد ہیں۔ حیفہ شہر کو آزاد کروانے سے اتحادی افواج کو سمندری راستہ سے رسد کی راہ کھل گئی تھی ۔

TOPPOPULARRECENT