Wednesday , September 26 2018
Home / عرب دنیا / نتن یاہو کے ہمراہ ممبئی حملوں میں بچ جانے والا یہودی بچہ موشے بھی آئیگا

نتن یاہو کے ہمراہ ممبئی حملوں میں بچ جانے والا یہودی بچہ موشے بھی آئیگا

 

یروشلم ۔ 8 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) ممبئی میں 2008ء میں پاکستانی دہشت گردوں نے جو حملے کئے تھے ان میں یہودیوں کا ایک مرکز ’’چبڈ ہاؤس‘‘ بھی شامل تھا جو ممبئی کے قلابہ علاقہ میں واقع ہے۔ وہاں حملوں کے دوران ایک یہودی بچہ موشے ہولز برگ جو اس وقت صرف دو سال کا تھا اور فی الحال اسرائیل میں سکونت پذیر ہے، ممبئی کے دورہ کے لئے بے چین ہے اور خوشی سے پھولے نہیں سما رہا۔ یاد رہیکہ اسرائیلی وزیراعظم بنجامن نتن یاہو 14 جنوری سے ہندوستان کے دورہ پر آرہے ہیں اور ان کے ساتھ موشے کے علاوہ اس کی دیکھ بھال کرنے والے نینی سینڈرہ سیموئلس بھی ممبئی آرہی ہیں۔ موشے اس وقت بیحد جذباتی ہوچکا ہے۔ موشے کے دادا ربی شمعون روزنبرگ نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ 11 سالہ موشے اس وقت جذباتی ہوچکا ہے اور ممبئی میں واقع اپنے مکان کو ایک بار پھر دیکھنا چاہتا ہے جہاں اس کے والدین کو ہلاک کردیا گیا تھا اور وہ ان دونوں کی نعشوں کے درمیان روتا رہا۔ اس کی نینی سانڈرہ نے اس وقت انتہائی بہادری کا مظاہرہ کرتے ہوئے اسے بچایا کیونکہ وہ مکان کے نچلے حصہ میں واقع ایک کمرے میں چھپی ہوئی تھی۔ اس وقت موشے اسرائیل میں ہے اور ممبئی آنے کیلئے بے چین ہے۔ حالانکہ دو سال کے بچہ کی یادداشت اتنی تیز نہیں ہوتی لیکن موشے کے ساتھ جو حالات پیش آئے اس نے اس کے معصوم ذہن کو بھی ایک ایسی تیز یادداشت عطا کردی کہ وہ معصوم ہونے کے باوجوداپنے اوپر گزرے ہوئے حالات کو فراموش نہیں کرسکا۔ 15 جنوری کو اسرائیلی وزیراعظم کے ساتھ موشے اور اس کی نینی بھی ہندوستان پہنچ رہے ہیں۔ موشے ممبئی کے مشہور مقامات کا دورہ کرنا چاہتا ہے جس کی اس نے ایک فہرست بھی تیار کرلی ہے۔ ربی شمعون روزنبرگ نے مزید کہا کہ ممبئی سے ان کی یادیں وابستہ ہیں۔ قارئین کو یاد ہوگا کہ گذشتہ سال 15 جولائی کو وزیراعظم ہند نریندر مودی نے اپنے دورہ اسرائیل کے دوران موشے سے یروشلم میں ملاقات کی تھی۔ اس وقت موشے نے مودی سے ممبئی کا دورہ کرنے کی خواہش ظاہر کی تھی اور کہا تھا کہ جیسے جیسے میری عمر بڑھے گی میں ممبئی میں ہی رہنا پسند کروں گا وار چبہ ہاؤس کا ڈائرکٹر بنوں گا۔ مودی نے موشے کی اس پر اسے ممبئی آنے کی دعوت دی تھی اور یہ بھی کہا تھا کہ موشے اور اس کے ارکان خاندان کو طویل مدتی ویزا جاری کیا جائے گا تاکہ وہ کسی بھی وقت ممبئی اور دیگر شہروں کا دورہ کرسکیں۔ موشے نے کہا کہ وزیراعظم نریندر مودی سے ملاقات کے بعد اسے بیحد اچھا لگا اور ایسا محسوس ہوا جیسے میں اپنے ہی خاندان کے کسی قریبی فرد سے ملاقات کررہا ہوں جو اپنوں کو گلے لگالیتے ہیں جبکہ ممبئی میں موشے اسرائیلی وزیراعظم انجامن نتن یاہو اور ان کی اہلیہ سارہ کو بھی اپنے مکان پر مدعو کرنا چاہتا ہے۔ علاوہ ازیں وزیراعظم نریندر مودی کو بھی مہمان خصوصی کے طور پر مدعو کیا جائے گا۔ موشے کے ہندوستان کے سفر پر اس کے دادا، دادی، شمعون اور یہودیت روزنبرگ، نینی سینڈرہ اور ایک ماہر نفسیات ساتھ ہوں گے۔ ماہر نفسیات نے بھی بتایا کہ انہوں نے ذہنی طور پر موشے کو ممبئی کے سفر کیلئے آمادہ کیا اور کچھ اہم مقامات کی ایک فہرست بھی موشے نے تیار کی ہے جہاں وہ ممبئی میں قیام کے دوران جائے گا۔ موشے کے والدین ربی گورئیل اور رویکا ہولزبرگ جو چبڈہاؤس کے ڈائرکٹرس کے طور پر اپنے فرائض انجام دے رہے تھے۔ دہشت گردانہ حملوں کے دوران ہلاک کردیئے گئے تھے۔ روزنبرگ نے اپنی بات جاری رکھتے ہوئے کہا کہ یہ دیکھ کر بہت خوشی ہوتی ہیکہ ہندوستانی قیادت اور ہندوستانی عوام نے انہیں آج بھی فراموش نہیں کیا ہے جس کی وجہ سے ہمیں احساس اپنائیت ہوتاہے۔ موشے کی نینی سینڈرہ اس وقت اسرائیل کے شہر افولا میں مقیم ہیں، نے ٹیلیفون پر بتایا کہ موشے بھی ممبئی کے دورہ کو لیکر بیحد پرجوش ہے۔ اس نے کچھ روز قبل اسکول روانہ ہونے سے قبل مجھے بتایا کہ وہ ممبئی کے دورہ کو لیکر بیحد پرجوش ہے۔ جس طرح ہندو برہمنوں میں ’’جنیو‘‘ کی رسم ادا کی جاتی ہے جو ایک دھاگہ ہوتا ہے اسی سے مماثل ’’بارمٹنرواہ‘‘ یہودیوں میں انجام دیا جاتا ہے جب بچہ 13 سال کا ہوجاتا ہے۔ موشے کیلئے یہ رسم ممبئی میں ادا کی جائے گی۔ ہندوستان نے موشے اور اس کے دادا۔ دادی کیلئے ہمہ رخی 10 سالہ ویزا جاری کیا ہے جس سے وہ ہندوستان میں کہیں بھی سفر کرسکتے ہیں۔ سینڈرہ کو بھی کچھ عرصہ قبل حکومت اسرائیل کی جانب سے تہنیت پیش کی گئی تھی۔

TOPPOPULARRECENT