Tuesday , December 11 2018

نتیش کی 130 ایم ایل ایز کیساتھ صدرسے ملاقات

نئی دہلی ۔ 11 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) جے ڈی (یو) قائد نتیش کمار نے آج بہار کی سیاسی جنگ صدرجمہوریہ پرنب مکرجی تک پہنچا دی اور اپنے حامی 130 ارکان اسمبلی کی پریڈ کروائی۔ انہوں نے چیلنج کیا کہ چیف منسٹر جتن رام مانجھی سے کہا جائے کہ ایوان اسمبلی میں ’’اقل ترین وقت‘‘ میں اپنی اکثریت ثابت کر دکھائیں۔ دریں اثناء پٹنہ ہائیکورٹ نے عملی اعتبار

نئی دہلی ۔ 11 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) جے ڈی (یو) قائد نتیش کمار نے آج بہار کی سیاسی جنگ صدرجمہوریہ پرنب مکرجی تک پہنچا دی اور اپنے حامی 130 ارکان اسمبلی کی پریڈ کروائی۔ انہوں نے چیلنج کیا کہ چیف منسٹر جتن رام مانجھی سے کہا جائے کہ ایوان اسمبلی میں ’’اقل ترین وقت‘‘ میں اپنی اکثریت ثابت کر دکھائیں۔ دریں اثناء پٹنہ ہائیکورٹ نے عملی اعتبار سے جے ڈی (یو) مقننہ پارٹی کے قائد کی حیثیت سے نتیش کمار کے انتخاب پر حکم التوا جاری کردیا۔ صدرجمہوریہ سے ملاقات کے بعد نتیش کمار نے ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ گورنر کی جانب سے فیصلہ میں تاخیر ماحول کو ’’زہریلا‘‘ بنا رہی ہے اور سودے بازی کی حوصلہ افزائی کررہی ہے۔ ان کے ہمراہ صدر پارٹی شردیادو، آر جے ڈی قائد لالو پرساد، صدر سماج وادی پارٹی ملائم سنگھ یادو اور کانگریس قائد سی پی جوشی تھے۔ ان سب نے صدرجمہوریہ سے ملاقات کی۔ حکمت عملی میں تبدیلی لاتے ہوئے انہوں نے مطالبہ کرنے کے بجائے حکومت جلد از جلد تشکیل دینے کی اجازت کی گذارش کی اور کہا کہ گورنر کیسری ناتھ ترپاٹھی مانجھی سے خواہش کرسکتے ہیکہ اپنی اکثریت ثابت کرد دکھائیں لیکن چیف منسٹر کو صرف اقل ترین مہلت دی جانی چاہئے۔

ان ہی کے خیالات کا اعادہ کرتے ہوئے لالو پرساد نے بھی کہا کہ ترپاٹھی کو فوری فیصلہ کرنا چاہئے اور مانجھی سے اپنی اکثریت ثابت کرنے کا مطالبہ کرنا چاہئے۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ نریندر مودی حکومت بہار میں صدر راج نافذ کرنے کی سازش کررہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ بہار ایک حساس ریاست ہے اور اگر گورنر راج نافذ کیا جائے تو ہم نہیں جانتے کہ بہار میں کیا ہوگا۔ نتیش کمار نے الزام عائد کیا کہ یہ سب ریاست میں صدر راج نافذ کرنے کا سیاسی کھیل کھیلا جارہا ہے۔ صدر جمہوریہ نے تمام مسائل کی اختتام تک سماعت کی اور تیقن دیا کہ وہ معاملہ کا جائزہ لیں گے۔ سابق چیف منسٹر بہار نے کہا کہ انہیں واضح اکثریت حاصل ہے۔ انہوں نے 130 ارکان اسمبلی کی آج پریڈ کروائی ہے۔ وہ سب یہاں کھڑے ہیں اور کوئی بھی دیکھ سکتا ہیکہ وہ اکثریت میں ہیں۔ اس کے باوجود تشکیل حکومت کی راہ ہموار نہ کرنا ناانصافی ہوگی اور جمہوریت کے ساتھ کھلواڑ ہوگا۔ دریں اثناء پٹنہ سے موصولہ تازہ ترین اطلاع کے بموجب گورنر بہار نے چیف منسٹر جتن رام مانجھی کو ہدایت دی ہیکہ وہ 20 فبروری کو اعتماد کا ووٹ حاصل کریں۔

TOPPOPULARRECENT