Saturday , November 25 2017
Home / Top Stories / نجیب کے معاملہ میں صدرجمہوریہ سے نمائندگی

نجیب کے معاملہ میں صدرجمہوریہ سے نمائندگی

رپورٹ طلب کرنے پرنب مکرجی کا کجریوال کو تیقن
نئی دہلی6 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) چیف منسٹر دہلی اروند کجریوال نے آج کہا کہ صدرجمہوریہ پرنب مکرجی نے تیقن دیا ہے کہ وہ لاپتہ طالب علم کے بارے میں وزارت امور داخلہ اور جواہر لال نہرو یونیورسٹی (جے این یو) انتظامیہ سے رپورٹ طلب کریں گے۔ چیف منسٹر نے آج صدرجمہوریہ سے ملاقات کی ، بعدازاں ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ لاپتہ طالب علم کے بارے میں انہوں نے پرنب مکرجی کو واقف کرایا۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ دہلی پولیس نے سیاسی دباؤ کی بناء اس معاملے میں کوئی کارروائی نہیں کی۔ کجریوال نے کہا کہ نجیب کے ساتھ لڑائی میں جو لوگ ملوث تھے، پولیس نے کل ان سے پوچھ تاچھ کی۔ نجیب کے لاپتہ ہوئے 22 دن بعد پولیس حرکت میں آئی اور وہ بھی محض ضابطہ کی کارروائی تھی۔ کجریوال نے بتایا کہ انہوں نے صدرجمہوریہ کو اس معاملہ سے واقف کرایا۔ صدرجمہوریہ نے یقین دہانی کرائی کہ وہ اس ضمن میں دہلی پولیس اور جے این یو سے رپورٹ طلب کریں گے۔ بعدازاں کجریوال نے ٹوئٹ کیا کہ انہوں نے صدرجمہوریہ سے ملاقات کی اور جے این یو کے لاپتہ طالب علم نجیب کے معاملہ میں مداخلت کی خواہش کی۔ صدرجمہوریہ نے ممکنہ مدد کا تیقن دیا اور کہا کہ وہ وزارت امور داخلہ اور جے این یو سے رپورٹ طلب کریں گے۔ 3 نومبر کو جے این یو کیمپس میں یگانگت اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کجریوال نے دہلی پولیس پر اس معاملے کی موثر انداز میں تحقیقات نہ کرنے کا الزام عائد کیا تھا۔ کجریوال نے جن کی دہلی پولیس کے ساتھ اکثر تکرار ہوتی رہتی ہے، کہا تھا کہ وہ اس معاملے کی تحقیقات کی جرات نہیں کرسکتی کیونکہ یہ معاملہ آر ایس ایس کی طلبہ تنظیم اے بی وی پی سے تعلق رکھتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT