Monday , May 28 2018
Home / اضلاع کی خبریں / نرساپور میں برقعہ پوش غیر مسلم خواتین کی ہل چل سے سنسنی

نرساپور میں برقعہ پوش غیر مسلم خواتین کی ہل چل سے سنسنی

کمسن بچوں کا تعاقب ، پولیس مصروف تحقیقات
نرساپور /22 ڈسمبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) مسجد صفاء نرساپور کے قریب آج بعد نماز جمعہ اس وقت سنسنی پھیل گئی ۔ جب دو غیر مسلم خواتین کو برقعہ میں تھیں مقامی نوجوانوں نے پکڑ لیا ۔ یہ خواتین بھیک مانگنے کے بہانے مسجد کے پاس موجود تھیں جو نماز جمعہ کے بعد مصلیوں کی واپسی کے دوران کمسن بچوں کا تعاقب کر رہی تھیں ۔ ان خواتین کی مشتبہ سرگرمیوں کو دیکھ کر مقامی نوجوان نے ان سے دریافت کیا اور شبہ کے فوری بعد ان خواتین کو نرساپور پولیس کو سپرد کردیا ۔ بتایا جاتا ہے کہ ان خواتین نے مسجد کے قریب نوجوانوں کو اپنے نام رخصانہ اور سلطانہ بتایا جبکہ پولیس نرساپور کے سامنے انہوں نے اپنی شناخت سنگیتا اور ریکھا بتائی ۔ ان خواتین کے ساتھ ایک اور خاتون بھی موجود تھی جو فرار ہونے میں کامیاب ہوگئی ۔ ابتدائی تحقیقات کے بعد پتہ چلا ہے کہ ان خواتین کا تعلق جو مسلم حلیہ میں بھیک مانگنے کی غرض سے بچوں کا اغواء کرنے آئی تھیں ۔ ان کا تعلق شولاپور سے بتایا گیا ہے ۔ جو سداشیوپیٹ کے علاقہ میں جھونپڑیوں میں قیام کئے ہوئے اس واقعہ کی اطلاع کے بعد نائب سرپنچ نرساپور محمد نعیم الدین پولیس اسٹیشن پہونچ گئے اور انہوں نے پولیس سے مطالبہ کیا کہ ان خواتین کی تحقیقات کرتے ہوئے سخت کارروائی کی جائے ۔ نائب سرپنچ نرساپور نے کہا کہ برقعہ کی آڑ میں خواتین کی ایسی سرگرمیاں سماج میں بدامنی بے چینی کا سبب بن سکتی ہیں اور سازش کے تحت سماج کے امن کو بھی نقصان پہونچایا جاسکتا ہے ۔ انہوں نے پولیس سے مطالبہ کیا کہ وہ معاملہ کی جامع تحقیقات کو انجام دے ۔ انہوں نے نرساپور کے شہریوں سے درخواست کی کہ وہ اپنی آبادی میں ایسی خواتین سے چوکس رہے اور بچوں پر خاص توجہ دیں ۔

TOPPOPULARRECENT