Monday , April 23 2018
Home / اضلاع کی خبریں / نرمل میں حالات کشیدہ مگر قابو میں

نرمل میں حالات کشیدہ مگر قابو میں

احتجاجی نوجوانوں پرپولیس کا لاٹھی چارج ‘ خاطیوں کو بخشا نہیں جائے گا : ایس پی

نرمل۔26 مارچ ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) ضلع مستقر نرمل میں آج بھی حالات کشیدہ اورپولیس کے خلاف غم و غصہ دیکھا گیا ۔ آج پھر اچانک بعد نماز ظہر پھر ایک بار گلزار مارکٹ میں اسی انداز سے پولیس نے لاٹھی چارج کیا کیونکہ مارکٹ کے نوجوان پولیس کے رویہ کے خلاف احتجاج پر اتر آئے تھے ۔ نمائندہ ’’سیاست‘‘ نے اس علاقہ کا دورہ کیا تو سڑک پر جابجا چپل بکھرے ہوئے تھے ۔ حالات کو دیکھتے ہوئے پولیس کے اعلیٰ عہدیدار مسٹر پرمود کمار ڈی آئی جی کریم نگر رینج نرمل پہنچ کر کیمپ کیا ہے ۔ پولیس کی طلایہ گردی میں شدت پیدا کرتے ہوئے حالات پر قابو پانے کی کوشش کی جارہی ہے ۔ محلہ مارکٹ کے نوجوانوں میں پولیس کے خلاف شدید غصہ دیکھا گیا جبکہ ضلع ایس پی نے تیقن دیا کہ کسی شرپسند کو چاہے اس کا رتبہ اور مقام کچھ بھی ہو بخشا نہیں جائے گا ۔ ایس پی وشنویس واریا نے شہریان نرمل سے پُرزور اپیل کی کہ وہ افواہوں پر کان نہ دھریں‘ پُرامن فضاء کی برقراری میں پولیس کا تعاون کریں ۔ پولیس کو اس بات کا شبہ ہے کہ حالات کو بگاڑنے میں کوئی غیر مقامی عناصر ملوث ہوسکتے ہیں کیونکہ نرمل کی گنگا جمنی تہذیب ایک مثالی ہے تاہم اس واقعہ کے بعد نرمل میں خوف و ہراس کا ماحول بنا ہوا ہے ۔ شرپسند منظم انداز میں اس علاقہ کی فضاء کو مکدر کرنے کی کوشش کررہے ہیں ۔ رات میں انتظامی کمیٹی مسجد گلزار کے ذمہ داروں نے بار بار مائیک کے ذریعہ مسلم نوجوانوں کو صبر و تحمل سے کام لینے کی اپیل کرتی رہی لیکن اب بھی حالات کشیدہ ہیں لیکن قابو میں ہے ۔ فرقہ پرست طاقتوں نے نرمل جیسے پُرامن علاقہ میں سر اٹھانے کی کوشش کی ہے تاہم مقامی لوگ بلالحاظ مذہب و ملت ایک پلیٹ فارم پر آکر امن و امان کی بحالی کیلئے کام کرنے کی ضرورت ہے ۔ علاقہ نرمل اس وقت پولیس چھاؤنی میں تبدیل ہوگیا ہے ۔ پولیس کے راست انتظامات کی نگرانی ڈی آئی جی کریم نگر رینج مسٹر پرمود کمار کررہے ہیں ۔ سب ڈیویژن پولیس آفیسر کی اطلاع کے مطابق سی سی کیمروں کے ذریعہ شرپسندوں کی نشاندہی کی جارہی ہے ۔ چار مقدمات درج کرتے ہوئے اب تک 8 افراد کو گرفتار کیا گیا ہے ۔ مزید گرفتاریوں کا سلسلہ جاری ہے ۔ سب ڈیویژنل پولیس آفیسر مسٹر ٹی منوہر ریڈی نے بتایا کہ امن و امان کی فضاء کو بگاڑنے والے کسی بھی فرد کو بخشا نہیں جائے گا ۔ حالات کشیدہ ہیں لیکن قابو میں بتائے گئے ۔

TOPPOPULARRECENT