Monday , September 24 2018
Home / Top Stories / نریندر مودی کے ساتھی امیت شاہ کے خلاف کیس درج

نریندر مودی کے ساتھی امیت شاہ کے خلاف کیس درج

بجنور ؍نئی دہلی /6 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) نریندر مودی کے قریبی ساتھی امیت شاہ کے خلاف ایف آئی آر درج کیا گیا ہے ۔ مسلمانوں سے انتقام لینے ان کی اشتعال انگیز تقریر پر حکام نے آج ان پر مقدمہ دائر کردیا ۔ الیکشن کمیشن نے بھی ان کی اشتعال انگیز تقریر کا جائزہ لیا ہے ۔ ایف آئی آر درج کرنے کے خلاف بی جے پی نے احتجاج کرتے ہوئے ضلع بجنور نظم و نسق

بجنور ؍نئی دہلی /6 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) نریندر مودی کے قریبی ساتھی امیت شاہ کے خلاف ایف آئی آر درج کیا گیا ہے ۔ مسلمانوں سے انتقام لینے ان کی اشتعال انگیز تقریر پر حکام نے آج ان پر مقدمہ دائر کردیا ۔ الیکشن کمیشن نے بھی ان کی اشتعال انگیز تقریر کا جائزہ لیا ہے ۔ ایف آئی آر درج کرنے کے خلاف بی جے پی نے احتجاج کرتے ہوئے ضلع بجنور نظم و نسق پر تنقید کی اور کہا کہ یہ ایف آئی آر درست نہیں ہے

بلکہ یہ منظم سازش کا حصہ ہے ۔ اترپردیش میں انتخابی منظر کو فرقہ وارانہ رنگ دینے کی کوشش کی جارہی ہے ۔ چیف الیکٹورل آفیسر امیش سنہا نے لکھنؤ میں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ تعزیرات ہند کی مختلف دفعات کے تحت امیت شاہ کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا ہے ۔ ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ نے بھی امیت شاہ کی تقریر میں بعض قابل اعتراض حصے کو نوٹ کرتے ہوئے آر پی اے کے تحت مقدمہ درج کیا ہے ۔ امیت شاہ کو تعزیرات ہند کی دفعہ 153(عوام کو اکسانا) اور دفعہ 125 قانون عوامی نمائندگان (دو طبقات کے درمیان منافرت پھیلانے) کا مقدمہ درج کیا گیا ہے ۔ کانگریس نے کل امیت شاہ کے خلاف شکایت درج کروائی تھی جس پر حکام نے یہ کارروائی کی ہے ۔

یو پی کے انتخابی عہدیداروں نے مظفر نگر میں کی گئی امیت شاہ کی تقریر کی سی ڈی ڈسٹرکٹ الیکٹورل آفیسر کی رپورٹ کے ساتھ الیکشن کمیشن کو روانہ کی تھی ۔ ذرائع نے کہا کہ امیت شاہ کے بیان کا جائزہ لینے کے بعد ان پر مقدمہ دائر کیا گیا ہے ۔ مرکزی وزیر اور کانگریس کے لیڈر بینی پرساد ورما نے سماج وادی پارٹی اور بی جے پی پر الزام عائد کیا کہ دونوں پارٹیاں ایک دوسرے سے گٹھ جوڑ کرلئے ہیں لہذا الیکشن کمیشن کو ان پارٹیوں پر پابندی عائد کرنی چاہئیے ۔ یو پی میں مودی اور امیت شاہ کی انتخابی مہم پر بھی پابندی عائد کی جانی چاہیے ۔ امیت شاہ کی تقریر کی مذمت کرتے ہوئے ابھیشک سنگھوی نے بی جے پی پر تنقید کی ۔

TOPPOPULARRECENT