Friday , June 22 2018
Home / اضلاع کی خبریں / نسل نو میں اخلاقی اقدار کو فروغ دینے کی ضرورت

نسل نو میں اخلاقی اقدار کو فروغ دینے کی ضرورت

محبوب نگر میں مشاعرہ، سید ریاض تنہا و ڈاکٹر سیادت علی کا خطاب

محبوب نگر میں مشاعرہ، سید ریاض تنہا و ڈاکٹر سیادت علی کا خطاب
محبوب نگر 26 ڈسمبر (راست) ادارہ ادب اسلامی ہند تخلیقی ادب کے ذریعہ اخلاقی اقدار کے فروغ و ارتقاء کے لئے جدوجہد کررہی ہے تاکہ سماجی اصلاح اور تعمیری ادب سے انسانیت کو کامیابی کی معراج تک پہنچایا جائے۔ ان خیالات کا اظہار جناب سید ریاض تنہا صدر ادارہ ادب اسلامی ہند ریاست تلنگانہ نے آج محبوب نگر میں منعقدہ اجلاس و مشاعرہ سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انھوں نے کہاکہ اہل قلم میں احساس کی بیداری اور معاشرے کے مسائل کے حل کیلئے ادب کو تخلیق کرنے کی جستجو پیدا کی جائے اور ایسا ادبی ماحول فراہم کرنا چاہئے جس سے صلاحیتوں کو نشوونما ملے۔ ڈاکٹر شیخ سیادت علی صدر ادارہ ادب اسلامی محبوب نگر نے اپنے خطاب میں کہاکہ ادارہ ادب اسلامی تعمیری ادب کے فروغ کیلئے کوشاں ہے۔ عصر حاضر میں انگریزی ادب نے نہ صرف اُردو بلکہ تلگو اور ہندی زبانوں پر بھی اپنے اثرات ڈالے ہیں جس کی وجہ سے موجودہ معاشرے میں اخلاقی قدروں میں کمی دیکھی جارہی ہے جو ایک تشویشناک پہلو ہے جس پر توجہ کی ضرورت ہے۔ ادارہ ادب اسلامی ادب میں منفی رجحانات کی حوصلہ شکنی اور مثبت رجحانات کی حوصلہ افزائی کرتا رہا ہے۔ قبل ازیں ادارہ کی تشکیل جدید عمل میں آئی۔ جناب شجاعت علی ناظم ضلع نے ادارہ کے مختلف عہدوں کیلئے منتخبہ نام پیش کئے جن میں سرپرست جناب حلیم بابر، صدر ڈاکٹر شیخ سیادت علی، نائب صدر جامی وجودی، معتمد ڈاکٹر محمد عبدالعزیز سہیل، شریک معتمد محمد اسحاق، خازن محمد سردارالدین، اراکین محمد علی دانش، محمد اسمٰعیل، عبدالرؤف ، شیخ شجاعت علی، اجلاس کے بعد نعتیہ مشاعرہ کا انعقاد عمل میں آیا جس میں جناب سید ریاض تنہا، جناب رحیم قمر نظام آباد، مقامی شعراء جناب نور آفاقی، جناب حلیم بابر، جناب انجم برہانی (چچا پالموری)، جناب صادق فریدی، جناب جامی وجودی، جناب محبت علی منان، جناب خواجہ معین الدین خوشتر، جناب جلیل رضا نے اپنا کلام پیش کیا۔ جناب حلیم بابر نے مشاعرہ کی نظامت انجام دی۔ ڈاکٹر محمد عبدالعزیز سہیل کے شکریہ پر مشاعرہ کا اختتام عمل میں آیا۔

TOPPOPULARRECENT