نشہ میں دھت ڈرائیور کی تین خواتین کو ٹکر ‘ 1 ہلاک

دو خواتین شدید زخمی ۔ ملزم مقامی افراد نے دبوچ لیا ۔ کار ضبط
حیدرآباد ۔ /7 جنوری (سیاست نیوز) شہر کے مصروف ترین علاقے جوبلی ہلز میں پیش آئے ایک المناک سڑک حادثہ میں حالت نشہ میں گاڑی چلانے والے ایک ڈرائیور نے تین خواتین کو ٹکر دیدی جس میں ایک برسرموقع ہلاک جبکہ دیگر دو شدید زخمی ہوگئیں ۔ تفصیلات کے بموجب روڈ نمبر 10 جوبلی ہلز رات دیر گئے انتہائی نشہ میں دھت کار ڈرائیور وشنو وردھن نے تیز رفتاری سے کار چلاتے ہوئے اسکوٹی پر جانے والی خواتین کو ٹکر دیدی ۔ اس حادثہ میں سرینگر کالونی کی ساکن مستانی برسرموقعہ ہلاک ہوگئی جبکہ انوشا شدید زخمی ہوگئی لیکن پریا معمولی طور پر زخمی ہوئی ۔ پولیس ذرائع نے بتایا کہ اس حادثہ میں مستانی کی برسرموقع موت واقع ہونے کے بعد پولیس نے انوشا کو دواخانہ منتقل کیا جہاں پر اسے ڈاکٹروں نے برین ڈیڈ قرار دیا ۔ پولیس نے علاقہ کے سی سی ٹی وی کیمروں کی مدد سے اس حادثہ کی تحقیقات کا آغاز کیا جس میں یہ معلوم ہوا کہ وشنو وردھن اپنی کار کو انتہائی تیز رفتاری اور بے راہ روی سے چلارہا تھا جس کے نتیجہ میں اس نے خواتین کی موٹر سائیکل کو ٹکر دیدی ۔ حادثہ کے بعد وشنو وردھن نے کار کو ڈیوائیڈر سے ٹکر دیدی اور وہاں سے فرار ہونے کی کوشش کررہا تھا کہ مقامی عوام نے اسے پکڑ کر پولیس کے حوالے کیا ۔ ذرائع نے مزید بتایا کہ وشنووردھن کا پولیس نے برتھ انالائیزر کے ذریعہ اس کا معائنہ کیا جس میں یہ معلوم ہوا کہ وہ انتہائی حالت نشہ میں تھا اور 200 پوائنٹ شراب کی شرح اس کے خون میں موجود ہونے کی رپورٹ موصول ہوئی ۔ پولیس جوبلی ہلز نے وشنووردھن کو گرفتار کرتے ہوئے اس کی کار بھی برآمد کرلی ۔ کل ملزم ڈرائیور کو عدالت میں پیش کیا جائے گا اور مزید تحقیقات جاری رہے گی ۔

 

عادی شرابی شوہر کے ہاتھوں
بیوی کے قتل کا واقعہ
حیدرآباد ۔ /7 جنوری (سیاست نیوز) مہیشورم پولیس اسٹیشن حدود میں پیش آئے ایک واقعہ میں عادی شرابی شوہر نے اپنی بیوی کا قتل کردیا ۔ پولیس کے بموجب 37 سالہ وی بجی ساکن کندوکور ضلع رنگاریڈی جو پیشہ سے چوڑی فروش تھی کو آئے دن اس کا عادی شرابی شوہر روی کردار پر شبہ کرتے ہوئے اس کی پٹائی کیا کرتا تھا ۔ کل رات بھی حالت نشہ میں روی نے اپنی بیوی سے جھگڑے کے بعد اس پر لاٹھی سے وار کردیا جس کے نتیجہ میں اس کی موت واقع ہوگئی ۔ پولیس مہیشورم نے روی کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کرلیا ہے اور اسے حراست میں لے لیا ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT