Monday , December 11 2017
Home / اضلاع کی خبریں / نظام آبادمیں ترقیاتی کاموں کیلئے منظورہ رقم منسوخ

نظام آبادمیں ترقیاتی کاموں کیلئے منظورہ رقم منسوخ

میونسپل کارپوریشن کے عہدیداروں کو حیرت ‘ برسراقتدار قائدین کو بھی شاک
نظام آباد:5؍ جنوری ( محمد جاوید علی)میونسپل کارپوریشن نظام آباد کیلئے حکومت کی جانب سے منظور کردہ 25کروڑ روپئے کو منسوخ کرنے کے احکامات جاری کرنے پر کارپوریشن کے عہدیدار حیرت زدہ ہوگئے ‘ان روپیوں کی منظور ی کے بعد شروع کئے گئے کام عارضی طور پر رک جانے کے امکانات ہیں۔ ریاستی حکومت نے میونسپل کارپوریشن نظا م آباد کے علاوہ کھمم ، کریم نگر ، راما گنڈم کارپوریشن کو 100 کروڑ روپئے فی کارپوریشن منظور کیا تھا اور ورنگل میونسپل کارپوریشن کو 300 کروڑ روپئے منظور کیا تھا ۔24؍ اکتوبر 2016ء کے روز میونسپل اڈمنسٹریشن کی جانب سے 100 کروڑ روپئے منظور کرتے ہوئے احکامات جاری کیا تھا اور پہلے مرحلہ میں 25 کروڑ روپئے کا چیک میونسپل کارپوریشن کو جاری کیا گیا تھا اور ا سکے بعد میونسپل کارپوریشن کے عہدیداروں نے شہر کے ترقی کیلئے منصوبہ بندی کرتے ہوئے رگھو ناتھ قلعہ تالاب کی ترقی کے علاوہ شہر کے مختلف مقامات پر نئی مارکٹ کی تعمیر کے علاوہ مسلخ کی جدید تعمیر کے علاوہ میونسپل کارپوریشن آفس میں زیر التواء کاموں کی تکمیل ، خالی مقامات کی ترقی ، اہم چوراہوں کی ترقی کیلئے اقدامات ، ڈمپنگ یارڈ کی تعمیر کیلئے 100 کروڑ روپئے خرچ کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا اچانک حکومت کی جانب سے ان روپیوں کو واپس لینے پر عہدیداروں ہلچل پیدا ہوگئی اور شروع کئے گئے کام عارضی طور پر متاثر ہوجانے کے امکانات ہیں ۔چیف منسٹر مسٹر چندر شیکھر رائو نے نظام آباد کے دورہ کے موقع پر ان 100 کروڑ روپیوں کا اعلان کیا تھا جو 25 کروڑ روپئے منظور کئے جانے کے بعد بڑے پیمانے پر برسراقتدار جماعت کے قائدین نے اس کی تشہیر کرتے ہوئے شہر میں فلکسیاں تنصیب کی تھی اچانک ان روپیوں کو واپس لینے پر برسراقتدار جماعت کے قائدین کو بھی زبردست شاک لگا ہے ۔ واضح رہے کہ ان روپیوں کی منظوری کے بعد شہر میں کی گئی تشہیر کو دیکھتے ہوئے اپوزیشن جماعت میں بھی 100 کروڑ کے بارے میں وضاحت کرنے کا مطالبہ بھی کیا تھا 100 کروڑ روپئے کا اعلان کرتے ہوئے 25 کروڑ روپئے منظور کئے جانے پر زبردست تنقید کرتے ہوئے وضاحت پیش کرنے کا بھی مطالبہ کیا گیا تھا لیکن حکومت اچانک ان روپیوں کو واپس لینے کے بعد برسراقتدار جماعت کے قائدین کو بھی زبردست شاک پہنچا ہے ۔ میونسپل کارپوریشن میں 14 ویں معاشی سنگم کے روپیوں کو بھی امرت اسکیم کی عمل آوری کیلئے خرچ کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے امرت اسکیم کے تحت آبی سربراہی کی عمل آوری کیلئے 1.40 کروڑ روپئے کے تخمینہ کئے گئے ۔ امرت اسکیم کے تحت 50 فیصد مرکزی حکومت کی جانب سے فنڈس فراہم کئے جائیں گے ۔ 20 فیصد ریاستی حکومت اور 30 فیصد تک فنڈس میونسپل کارپوریشن کی جانب سے فراہم کرنا ہوگا۔ میونسپل کارپوریشن میں رقم کی قلت کی وجہ سے میونسپل کارپوریشن 14 ویں معاشی سنگم کے روپیوں کو امرت اسکیم کے فنڈس کو خرچ کرنے کیلئے مختص کرتے ہوئے خرچ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ۔ میونسپل کارپوریشن کو معاشی سنگم کے تحت 19.85 کروڑوں روپئے منظور کئے گئے تھے ۔

TOPPOPULARRECENT