Monday , December 11 2017
Home / Top Stories / نظام آباد کی ترقی کے لیے 350 کروڑ روپئے کی منظوری

نظام آباد کی ترقی کے لیے 350 کروڑ روپئے کی منظوری

مطالبات کی یکسوئی پر رکن پارلیمنٹ کے کویتا کا ریاستی وزیر کے ٹی آر سے اظہار تشکر
حیدرآباد ۔ 9۔ اکتوبر (سیاست نیوز) وزیر انفارمیشن ٹکنالوجی و بلدی نظم و نسق کے ٹی راما راؤ نے رکن پارلیمنٹ نظام آباد کویتا کی نمائندگی پر ان کے لوک سبھا حلقہ میں مختلف کارپوریشنوں میں ترقیاتی کاموں کیلئے 350 کروڑ روپئے منظور کئے ہیں۔ کویتا نے آج سکریٹریٹ میں کے ٹی آر سے ملاقات کی اور نظام آباد ضلع زیر التواء مختلف ترقیاتی کاموں اور انفارمیشن ٹکنالوجی کے ٹاورس کی منظوری کیلئے نمائندگی کی ۔ انہوں نے اسمارٹ سٹیز کے قیام کے سلسلہ میں بھی تبادلہ خیال کیا۔ بعد میں میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کویتا نے بتایا کہ وزیر انفارمیشن ٹکنالوجی نے آئی ٹی ٹاورس کی تعمیر کیلئے 50 کروڑ روپئے منظور کئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جاریہ سال دسہرہ کے موقع پر حکومت نے یہ منظوری دی ہے اور وہ اس بات کی کوشش کریں گی کہ آئندہ سال دسہرہ تک آئی ٹی ٹاورس کی تعمیر کا کام مکمل ہوجائے ۔ انہوں نے کہا کہ کے ٹی آر نے انہیں رقومات کی منظوری کے مکتوبات حوالے کئے ۔ انہوں نے نظام آباد کے دورہ کے موقع پر کے ٹی آر کی جانب سے دیئے گئے تیقنات پر عمل آوری کیلئے اظہار تشکر کیا ۔ انہوں نے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ اور کے ٹی آر سے اظہار تشکر کرتے ہوئے کہا کہ دیرینہ مطالبات کی یکسوئی سے نظام آباد ضلع میں عوام کو بنیادی سہولتوں کی فراہمی میں مدد ملے گی۔ انہوں نے کہا کہ نظام آباد ضلع میں آئی ٹی پارک کے قیام کے سلسلہ میں نمائندگی کی گئی ہے اور وزیر انفارمیشن ٹکنالوجی نے اس سلسلہ میں مثبت ردعمل کا اظہار کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ آنے والے دنوں میں حکومت کے ریاست کے مختلف علاقوں میں آئی ٹی پارکس کے قیام کا منصوبہ رکھتی ہے ۔ آئی ٹی پارکس سے دیہی علاقوں کے طلبہ کو کافی مدد ملے گی۔ کویتا نے کہا کہ ہلدی بورڈ کا قیام مرکزی حکومت کے ہاتھ میں ہے اور اس سلسلہ میں انہوں نے بارہا نمائندگی کی ہے۔ انہوں نے اس یقین کا اظہار کیا کہ نظام آباد انفارمیشن ٹکنالوجی کے مرکز کی حیثیت سے ابھرے گا۔ انہوں نے کہا کہ مقامی رکن اسمبلی گنیش گپتا کی مساعی سے 60 آئی ٹی کمپنیوں نے نظام آباد میں مراکز کے قیام سے اتفاق کیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT