Wednesday , January 24 2018
Home / اضلاع کی خبریں / نظام شوگر فیکٹری کے احیاء کیلئے حکومت سنجیدہ

نظام شوگر فیکٹری کے احیاء کیلئے حکومت سنجیدہ

بودھن۔ 24 مارچ (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) رکن اسمبلی بودھن محمد شکیل عامر نے کین ڈیولپمنٹ آفس

بودھن۔ 24 مارچ (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) رکن اسمبلی بودھن محمد شکیل عامر نے کین ڈیولپمنٹ آفس
(CDC) بودھن میں منعقدہ ایک اجلاس سے مخاطب کرتے ہوئے بتایا کہ چیف منسٹر تلنگانہ کے چندر شیکھر راؤ نے نظام دکن شوگرس فیاکٹری کے تین یونٹس کے کسانوں کو راحت پہونچانے 11 کروڑ 26 لاکھ روپئے رقم جاری کی جن میں سے 3 کروڑ 80 لاکھ روپئے، این ڈی ایس ایل شکر نگر یونٹ کے کسانوں کی رقم بھی شامل ہے۔ جناب شکیل عامر نے بتایا کہ این ڈی ایس ایل کے تین یونٹس شکر نگر میدک و مٹ پلی کے کسانوں کو 11 کروڑ26 لاکھ روپیوں کا نقصان ہورہا تھا۔ جناب شکیل نے بتایا کہ 6 جنوری کو چیف منسٹر کی توجہ کسانوں کے اس نقصان کی جانب ایم پی کویتا ریاستی وزیر پوچا رام سرینواس ریڈیا اور وہ چیف منسٹر کی توجہ کسانوں کے نقصان کی جانب مبذول کروانے پر مسٹر کے سی آر نے فوری مثبت ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے 6 جنوری کو چند منٹ کے اندر ہی کسانوں کے نقصانات کی پابجائی کرنے کا اعلان کیا تھا۔ مسٹر کے سی آر نے اپنے وعدے کے مطابق شکر نگر یونٹ کے کسانوں کے علاوہ مٹ پلی این ڈی ایس ایل کیلئے 4 کروڑ 16 لاکھ میدک کے لئے 3 کروڑ 30 لاکھ اس طرح جملہ 11 کروڑ 26 لاکھ روپئے رقم بتوسط سرکاری محکمہ CDC کے کسانوں میں تقسیم کرنے جاری کردیا۔ جناب شکیل عامر نے بتایا کہ نظام دکن شوگرس کی سابقہ رونق بحال کرنے ٹی آر ایس حکومت سنجیدہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ عوام اور کسانوں کی بھلائی فیاکٹری کو حکومت کے زیرانتظام لینے میں یا کسانوں کے حوالے کرنے جس کسی فیصلے سے عوام کو فائدہ ہوگا۔ حکومت عوام اور کسانوں کی رائے حاصل کرنے کے بعد ہی قطعی فیصلہ کرے گی۔ قبل ازیں جناب شکیل عامر نے دفتر بلدیہ میں

TOPPOPULARRECENT