Thursday , August 16 2018
Home / دنیا / نقاب پر اعتراض‘ ڈرائیور کے خلاف کارروائی

نقاب پر اعتراض‘ ڈرائیور کے خلاف کارروائی

لندن ۔12 اگست ( سیاست ڈاٹ کام ) ایک مسلم خاتون کو چہرے سے نقاب ہٹانے پر مجبور کرنے والے بس ڈرائیور کے خلاف کارروائی کی گئی ہے، وہ مسافروں کو بتا رہا تھا کہ یہ دنیا خطرناک ہے۔ 20سالہ خاتون اپنی دو ماہ کی بچی کے ہمراہ تھی جب برسٹل سٹی سینٹر کی پہلی سروس کے ڈرائیور نے اس سے کہا کہ اگر اس نے چہرہ نہ دکھایا تو وہ اسے پتہ نہیں چل سکے گا کہ وہ کیا کچھ کر سکتی ہے۔وہ خاتون جن کا نام ظاہر نہیں کیا گیا ، برسٹل لائیو سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وہ پورے سفر کے دوران کہتا رہا کہ وہ بہت خوفزدہ ہو گیا ہے اور یہخاتونبہت خطرے میںہے۔ خاتون نے کہا کہ وہ مسلسل میری بے عزتی کرتا رہا اور مجھے دہشت گرد قرار دیتا رہا۔وہ ہر مسافر سے کہ رہا تھا کہ ہر شخص کو تمام لوگوں کا چہرہ دیکھنا چاہئے۔وہ میری بچی کی گود میں موجودگی کے باعث اشارے کر رہا تھا کہ میں بس کو بم سے اڑانے جا رہی ہوں۔خاتون کا کہنا تھا کہ اس واقعہ نے مجھے سخت خوفزدہ اور مایوسی کا شکار کر دیا ہے۔خاتون نے مزید کہا کہ میں سوچ سکتی تھی کہ اس شخص کا ممکنہ طور پر تعلق اس ملک سے نہیں جس نے کسی خاتون کا چہرہ نقاب میں ڈھکا ہوا نہیں دیکھا مگر اس نے عوامی مقام پر مجھ سے جو سلوک کیا بہت غلط ہے۔

TOPPOPULARRECENT