Saturday , December 16 2017
Home / ہندوستان / نقد رقم کے بغیر شادی کی تقریب

نقد رقم کے بغیر شادی کی تقریب

بطور تحفہ دولہے کے مکان میں بیت الخلاء کی تعمیر
جمشید پور۔/10جنوری،( سیاست ڈاٹ کام ) یہ شادی منفرد نوعیت کی تھی ، بغیر لین دین کی یہ شادی مشرقی سنگھ بھوم کے باڈیہ گاؤں کے مندر میں انجام پائی جس کے اندرون چند گھنٹے دولہے کے گھر میں بیت الخلاء تعمیر کردیا گیا۔ شادی سے قبل کل دلہن سنیتا کے ارکان خاندان جو کہ اتہلستا گاؤں کے متوطن ہیں دولہے سبھاش نائیک ساکن باڈیہ گاؤں کے ارکان خاندان نے آپس میں یہ طئے کیا کہ نائیک کے گھر میں بیت الخلاء تعمیر کیا جائے جس کیلئے دونوں خاندانوں نے تعاون کیلئے چیف منسٹر کیمپ آفس کے ڈپٹی کلکٹر سنجے کمار نے بتایا کہ تعمیری کام اتوار کی شب شروع کیا گیا اور شادی سے قبل مکمل کرلیا گیا ۔ سنجے کمار نے دونوں خاندانوں کو نقد رقم کے بغیر شادی انجام دینے کی ترغیب دی تھی اور تمام اخراجات شامیانے کا کرایہ ، ترکاری ، پکوان کی اشیاء اور زیورات کی خریدی کی ادائیگی بغیر رقم کے عمل میں آئی حتیٰ کہ شادی کی رسومات ادا کرنے والے پجاری کا نذرانہ اور نو بیاہی جوڑے کیلئے تحائف بھی آن لائن یا چیک کے ذریعہ پیش کئے گئے۔ انہوں نے بتایا کہ دونوں خاندانوں کے ساتھ دیہاتیوں نے اس بات پر مسرت کا اظہار کیا ہے کہ وہ کیش لیس سوسائٹی تحریک کا حصہ بن گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ نوٹ بندی کے بعد ریاست میں غالباً بغیر نقد رقم کے پہلی شادی انجام دی گئی۔ تقریب شادی میں بی جے پی رکن اسمبلی لکشمی ناڈو، سرکل آفیسر سدھو چریا دیوگم، ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ پولیس ( موسی بونی ) اجیت کمار ویمل، ماہر ماحولیات جمنا تاڈہ اور دیگر نے شرکت کرتے ہوئے چیک کی شکل میں تحائف پیش کئے۔ شادی کے فوری بعد جوڑے کے نام پر ایک مشترکہ کھاتہ کھولا گیا اور انہیں اے ٹی ایم کارڈ حوالے کردیا گیا ۔ بہر حال تمام دیہاتیوں نے منفرد نوعیت کی کیاش لیس میریج کا دلچسپی سے مشاہدہ کیا۔

TOPPOPULARRECENT