Wednesday , December 13 2017
Home / مذہبی صفحہ / نماز خشوع و خضوع سے ادا کریں

نماز خشوع و خضوع سے ادا کریں

نماز اسلام کا پہلا رکن ہے اور کسی بھی حالت میں نماز ترک نہیں کی جاسکتی ۔ اسلام کے دوسرے ارکان روزہ ، زکوٰۃ اور حج شرائط کے ساتھ فرض ہیں لیکن نماز کے لئے کوئی شرط یا عذر نہیں ہے۔ ہر حال میں نماز ادا کرنا ہے ۔ نماز مسلم و کافر میں فرق کا اظہار ہے اور اسے پورے آداب و احترام سے ادا کرنا ہے ۔ حدیث شریف کا مفہوم ہے کہ نماز ادا کرو تو ایسی جیسے میں نے ( یعنی رسول اللہ صلی اﷲ علیہ و آلہٖ و سلم ) نے ادا کی ہے ۔ اس لئے ہم سب کو چاہئے کہ نماز کے لئے جب مسجد آئیں تو پوری طرح زینت کرکے یعنی اچھا لباس زیب تن کرکے آئیں اور پرسکون انداز میں مکمل طورپر سنتوں کی ادائیگی کے ساتھ اطمینان قلب اور سکوت جسم کے ساتھ ارکانِ نماز ادا کرتے ہوئے نماز کی تکمیل کریں۔ جلد جلد نماز کے ارکان اور تلاوت کلام پاک کرنے سے نماز کامل نہیں ہوتی بلکہ اسے نماز کی چوری قرار دیا گیا ہے ۔ احادیث مبارکہ میں آیا ہے کہ جس کی نماز ٹھیک ہوگی اُس کے دوسرے اعمال بھی ٹھیک ہوں گے اور قیامت میں سب سے پہلا سوال نماز ہی کے متعلق ہوگا ۔ لہذا ضرورت اس بات کی ہے کہ نماز کی پابندی کے ساتھ ساتھ خشوع و خضوع کے ساتھ نماز کی ادائیگی کا اہتمام کریں۔ مصلیان مسجد کیلئے نماز کیلئے قبل ازوقت مسجد میں آنے کا حکم ہے تاکہ اگلی صفوں میں جگہ ملے اور نمازی کو زیادہ سے زیادہ ثواب حاصل ہو ۔ نمازی کو چاہئے کہ وہ نماز مکمل یکسوئی اور خشوع و خضوع کے ساتھ ادا کریں کیونکہ نماز رسول اکرم صلی اللہ علیہ و آلہٖ و سلم کی آنکھوں کی ٹھنڈک اور قیامت میں نماز کے متعلق پہلا سوال ہوگا ۔

TOPPOPULARRECENT