Tuesday , December 11 2018

نماز فجر کی تیاری کرنے والے اللہ کو پیارے

کوہیر میں المناک حادثہ ‘ برقی شاک سے ماں‘ بیٹا ہلاک‘ ہریش راؤ کا اظہار دکھ

کوہیر ۔ 8 ؍ اپریل (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) کوہیر منڈل مستقر پر واقع سکندر واڑی میں برقی شاک کی زد میں آ کر ماں اور بیٹا ہلاک ہوگئے ۔ سب انسپکٹر پولیس راملو کی اطلاع کے مطابق زینب النساء عمر 55 سال نماز فجر کے لئے وضو سے فارغ ہو کر اپنے صحن میں کپڑے سوکھانے والے تار پر واقع توال لینے گئی تھیں اسی رات زبردست تیز ہواؤں سے بارش ہونے کی وجہ سے توال گیلی ہوگئی تھی توال کو ہاتھ لگاتے ہی برقی کی زد میں آگئیں بتایا جا تا ہے کہ ان کا مکان ٹین شیڈ کا ہے ‘تیز ہوا کی وجہ سے پول سے سپلائی دینے والا وائر کٹ گیا تھا اور وائر کپڑے سکھانے والے تار سے مل گیا تھا اس وجہ سے برقی وائر میں پہنچ گئی تھی ۔ ماں کی آواز سن کر بیٹا محمد شاکر علی عمر 27 سال نے ماں کو بچا نے کی کوشش میں وہ موت کی آغوش میں چلا گیا ۔ بتایا جاتا ہے کہ 7 ماہ قبل شاکر کی شادی ہوئی تھی ‘ماں بیٹے کی نعشوں کو ظہیرآباد گورنمنٹ ہاسپٹل میں پوسٹ مارٹم کئے لئے روانہ کر دیا گیا تھا وہاں پر ریاستی وزیر ہریش راؤ ‘ بی بی پاٹل رکن پارلیمنٹ ظہیرآباد نے اطلاع ملتے ہی نعشوں کا دیدار کیا اور محکمہ برقی کے عہدیداروں کو ہدایت دی کہ ماں اور بیٹے کے ورثہ کے لئے 8 لاکھ روپئے فوری محکمہ برقی کی جانب سے ادا کریں اور وہ خود 30 ہزار روپئے ورثہ کو ادا کر دیئے ۔ ہریش راؤ کی فراخ دلی کی وجہ سے عوام میں زبردست ستائش کی جا رہی ہے ۔ ہر مصیبت زدہ کے کام ہریش کا شیوہ ہے ۔ اس موقع پر محمد فریدالدین رکن قانون ساز کونسل ‘ محمد عبدالوحید ٹی آر ایس پارٹی کوہیر ٹاؤن صدر محمد کلیم الدین ٹی آر ایس پارٹی یوتھ لیڈر محمد شوکت علی سابق صدرنشین محمد اسلم زید اور دیگر موجود تھے ۔ واضح رہے کہ ریاستی وزیر ٹی ہریش راؤ گورنمنٹ ہاسپٹل ظہیرآباد میں ڈائیلاسیس سنٹر کا افتتاح کر رہے تھے کہ اسی دوران نعشیں پوسٹ مارٹم کے لئے لے جایا گیا۔ انہوں نے نعشوں کا دیدار کیا اور محکمہ برقی کے عہدیداروں کو فی کس 4 – 4 لاکھ روپئے ایکس گریشیا دینے کی ہدایت دی اور خود 30 ہزار روپئے نقد رقم امداد روثاء کے حوالے کیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT