Tuesday , November 21 2017
Home / شہر کی خبریں / نندیال اسمبلی حلقہ میں انتخابی سرگرمیاں تیز

نندیال اسمبلی حلقہ میں انتخابی سرگرمیاں تیز

تلگودیشم اور وائی ایس آر کانگریس کے مابین کانٹے کا مقابلہ
حیدرآباد 8 اگسٹ (سیاست نیوز) ریاست آندھراپردیش کے حلقہ اسمبلی نندیال میں جاریہ ماہ منعقد ہونے والے ضمنی انتخاب کیلئے انتخابی سرگرمیاں شدت اختیار کررہی ہیں۔ برسر اقتدار تلگودیشم اور اپوزیشن وائی ایس آر کانگریس امیدواروں کی انتخابی سرگرمیاں عروج پر پہونچ گئی ہیں اور دونوں جماعتوں کے کارکن ایک دوسرے پر سبقت حاصل کرنے کوشاں ہیں ۔ یہاں سیاسی انحراف اور وفاداریوں کی تبدیلیوں کا سلسلہ بھی جاری ہے۔ چند قائدین نے وائی ایس آر کانگریس سے مستعفی ہوکر تلگودیشم میں شمولیت اختیار کی ہے تو دوسری جانب تلگودیشم پارٹی کے بعض قائدین وائی ایس آر کانگریس میں شمولیت اختیار کرچکے ہیں۔ اسی دوران تلگودیشم امیدوار مسٹر بھوما برہمانندا ریڈی اپنی انتخابی مہم میں اپنی کامیابی کا یقین ظاہر کر رہے ہیں اور عوام سے اپیل کررہے ہیں انھیں عوام کے آشیرواد کی شدید ضرورت ہے ۔ وہ منتخب ہونے پر حلقہ اسمبلی نندیال کو نہ صرف سرسبز و شاداب بنائیں گے بلکہ بڑے پیمانے پر ترقی دیتے ہوئے ایک مثالی حلقہ بنائیں گے۔ مسٹر برہمانندا ریڈی نے انتخابی مہم کے دوران اظہار خیال کرتے ہوئے عوام پر زور دیا کہ وہ ترقی میں رکاوٹیں پیدا کرنے والے قائدین کی باتوں میں ہرگز نہ آئیں اور ان قائدین کی دھوکہ باز چال بازیوں کے جال میں ہرگز نہ پھنسیں۔ انھوں نے کہاکہ گزشتہ دس سال قبل بحیثیت رکن اسمبلی وزارتی عہدے پر فائز رہے وائی ایس آر کانگریس امیدوار مسٹر شلپا موہن ریڈی نے حلقہ اسمبلی نندیال کو بالکلیہ طور پر نظرانداز کر رکھ دیا تھا۔ انھوں نے مزید کہاکہ ایک طرف حلقہ اسمبلی میں تیز رفتار ترقی جاری رہنے پر وہ صرف اور صرف ضمنی انتخاب کو پیش نظر رکھتے ہوئے کرنے کا تلگودیشم حکومت پر الزام عائد کیا جارہا ہے جوکہ بالکلیہ غلط و بے بنیاد ہے۔ انھوں نے کہاکہ چندرابابو نائیڈو کی زیرقیادت حکومت میں ریاست آندھراپردیش تیز رفتار ترقی کی سمت گامزن ہے جوکہ اپوزیشن کیلئے قابل برداشت نہیں ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT