Wednesday , December 13 2017
Home / شہر کی خبریں / نواب شاہ عالم خان کی تدفین سربرآوردہ اصحاب کی شرکت

نواب شاہ عالم خان کی تدفین سربرآوردہ اصحاب کی شرکت

حیدرآباد 23اکٹوبر (سیاست نیوز ) حیدرآباد دکن کی تہذیب کے نمائندے اور ماہر تعلیمات و صنعت کار شخصیت نواب شاہ عالم خان کی آج بعد نماز عصر مسجد سلیمہ خاتون حمایت نگر میں نماز جنازہ ادا کی گئی اور مسجد سے متصل قبرستان ہی میں انہیں سپرد لحد کیا گیا ۔ نواب شاہ عالم خان کا کل رات دیر گئے انتقال ہوگیا تھا ۔ ان کی عمر 96 سال تھی ۔ نواب شاہ عالم خان کے انتقال کی خبر سننے کے بعد برکت پورہ میںواقع مرحوم کے مکان پہنچنے اور پسماندگان کو پرسہ دینے والوں میں ڈپٹی چیف منسٹر جناب الحاج محمد محمودعلی‘ ایڈیٹر روزنامہ سیاست جنا ب زاہد علی خان‘ سابق رکن پارلیمنٹ سکندر آباد انجن کمار یادو‘ مینیجنگ ایڈیٹر سیاست جناب ظہیر الدین علی خان‘ نیوز ایڈیٹر سیاست جناب عامر علی خان‘ سابق رکن اسمبلی مسٹر ششی دھر ریڈی‘ جناب افتخار حسین‘ جسٹس ای اسماعیل‘ قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل محمد علی شبیر ‘تلگودیشم قائد علی مسقطی‘ مسٹر پنکی ریڈی‘ امجد اللہ خان ‘ کانگریس قائد خلیق الرحمن کے علاوہ شہر حیدرآباد کی سرکردہ شخصیتوں ‘ مختلف مکاتب فکر کے علماء ومشائخین ‘ عالمی اورسماجی تحریکات سے وابستہ حضرات شامل ہیں جنھوں نے مرحوم کے مکان پہنچ کر پسماندگان کو نہ صرف پرسہ دیا بلکہ جلوس جنازہ میںشرکت کی او رنماز جنازہ بھی ادا کی ۔مرحوم نواب شاہ عالم خان ایجوکیشنل سوسائٹی وحیدرآباد سگریٹ فیکٹری کے چیرمین تھے۔ وہ حیدرآباد کی ایک وضعدار اور گنگا جمنی تہذیب کی مثالی شخصیت تھے ۔ وہ ملت اسلامیہ کی تعلیمی اور تجارتی ترقی کیلئے بھی سرگرم رہے ۔ ان کا شمار قدیم صنعتکاروں میں ہوا کرتا تھا ۔ مرحوم کے انتقال کی خبر جنگل کی آگ کی طرح پھیل گئی اور آخری دیدار کیلئے برکت پورہ میں واقع مکان پر مرحوم کے چاہنے والو ں کا تانتا بندھ گیا تھا۔مرحوم کو فلسفہ نگار کی حیثیت سے بھی یاد کیاجائے گا۔جلوس جنازہ میں سینکڑوں لوگوں نے شرکت کی ۔

TOPPOPULARRECENT