Tuesday , May 22 2018
Home / پاکستان / نواز شریف کی ایکبار پھر احتسابی عدالت میں پیشی

نواز شریف کی ایکبار پھر احتسابی عدالت میں پیشی

اسلام آباد ۔ 19 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان کے سابق وزیراعظم نواز شریف آج ایک بار پھر قومی احتسابی بیوریو کے سامنے پیش ہوئے جو دراصل پناما پیپرس بدعنوانی معاملات میں موصوف اور ان کے ارکان خاندان کے ملوث پائے جانے کے الزامات کا نتیجہ ہے۔ نواز شریف اپنی دختر مریم نواز اور داماد محمد صفدر کے ساتھ راست طور پر احتسابی عدالت میں پہنچے۔ قبل ازیں یہ تینوں ایک خانگی جیٹ کے ذریعہ لاہور پہنچے تھے۔ یہاں اس بات کا تذکرہ ضروری ہیکہ 67 سالہ نواز شریف اتوار کے روز لندن سے واپس آئے جہاں وہ ا پنی علیل اہلیہ کی عیادت کیلئے گئے تھے جو گلے کے کینسر سے متاثر ہیں۔ جج محمد بشیر مقدمہ کی سماعت کریں گے جہاں استغاثہ کے مزید گواہوں کے بیانات بھی ریکارڈ کئے جائیں گے۔ سابق وزیراعظم پاکستان نے کہا کہ پاکستانی عدلیہ دوہرے معیارات اختیار کررہا اور انصاف کا قتل کررہا ہے جو ناقابل برداشت ہے۔ انہوں نے کہاکہ عوام اس کو بالکل برداشت نہیں کریں گے۔ سپریم کورٹ نے جمعہ کے دن خان کی نااہل قرار دینے کی درخواست کو مسترد کردیا تھا۔ نواز شریف کو پناما پیپرس میں افشاء کے مقدمہ کے سلسلہ میں وزارت عظمیٰ کیلئے نااہل قرار دیا گیا ہے۔ نواز شریف نے کہا کہ قانون تحریک انصاف کیلئے نہیں بلکہ پاکستانی عوام کیلئے ہے۔ انہوں نے اعلان کیا کہ وہ ملک میں انصاف کے احیاء کیلئے ایک تحریک کا آغاز کریں گے۔ نواز شریف کی دختر مریم نواز اور ان کے داماد ریٹائرڈ کیپٹن محمد صفدر راست طور پر عدالت پہنچے تھے۔ وہ لاہور سے ایک خانگی جیٹ طیارہ کے ذریعہ عدالت آئے تھے۔ ان کی آمد کے موقع پر عدالت کے اطراف حفاظتی انتظامات انتہائی سخت کردیئے گئے تھے۔ آج مقدمہ کی سماعت میں استغاثہ کے گواہ یاسر بشیر پر بھی جرح کی گئی جو ایک خانگی بینک کے برانچ منیجر ہیں۔ انہوں نے نوازشریف کے بینک کھاتوں کی تفصیلات پیش کیں اور ان کے خلاف احتسابی عدالت کی کارروائی کو جائز قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ مریم نواز اور سابق وزیراعظم کے بینک کھاتوں کے مختلف سودوں کیلئے رقومات جاری کی جاچکی ہیں۔ انہوں نے عدالت سے کہاکہ مریم نواز کے بینک کھاتے کی تفصیلات میں کئی خامیاں پائی جاتی ہیں لیکن بینک کو ان کے کھاتے کے بارے میں کوئی شکایت تاحال وصول نہیں ہوئی۔

TOPPOPULARRECENT