Tuesday , December 18 2018

نوجوان صحیح کیریئر کا انتخاب کریں

سید محمد افتخار مشرف
کسی بھی فرد کی زندگی میں کیریئر کا انتخاب بے حد اہم ہوتا ہے ، وہی کیریئر کا انتخاب کریں جس میں آپ کی دلچسپی ہے۔ اچھے کیریئر کا انتخاب ہی کامیاب زندگی کی ضمانت ہے ۔ اسلام نے ’’اقرائ‘‘ اور ربی زدنی علماء کے حکم سے بتایا کہ دنیا میں صرف علم ہی ایسی نعمت ہے جس کی زیادتی کی دعا کی جائے ۔ علم و شئے ہے جو فطرت انسانی میں پوشیدہ صلاحیت اور قابلیت کو تعلیم کے ذریعہ ابھارا اور نکھارا جاتا ہے۔
آج سے پندرہ سو سال قبل نبی اکرم حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم نے بھی اس دشوار گزار دور میں علم حاصل کرنے کی ترغیب دی۔ ہر زبان کا علم ، فن اور معاشرتی علوم سے صحابہ کرام کو تربیت دی جس کی وجہ سے صرف دو سو سال کے عرصہ وہ دنیا کے امام بن گئے ۔ حدیث مبارکہ ہے کہ ہمارے نبی حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمادیا کہ ہر اچھی بات مومن کا ورثہ ہے ، جہاں ملے حاصل کرے ۔ تعلیم کا مقصد محض کمانا نہیں ہے بلکہ خیال اور عمل کی اصلاح ہے۔
نت نئی ٹکنالوجی کی ایجادات نے دنیا کے مختلف ممالک ، اقوام اور براعظم کے درمیان مسافت کو آسان بنادیا ہے ۔ آج کے اس تیز رفتار دور میں نوجوان اپنی صلاحیتوں کی بنیاد پر دنیا کے ہر چھوٹے بڑے ملکوں کے علاوہ خود اپنے ملک میں اپنا روزگار حاصل کر رہا ہے۔ اللہ تعالیٰ نے وعدہ کیا ہے کہ ہر ایک کا رزق دینے والا میں ہوں مگر رزق کو ڈھونڈنے کی ذمہ داری انسان کی ہے۔ اگر ہمارے ملک میں نوجوان انجنیئرنگ اور بزنس مینجمنٹ کی تعلیم کو زیادہ ترجیح دے رہے ہیں تو اس میں ایک حقیقت ہے کہ ان میں سب سے زیادہ اور پرکشش تنخواہیں دی جارہی ہیں ۔ اس کے علاوہ اور بھی بہت سے شعبے ہیں جن میں روزگار کے پرکشش مواقع دستیاب ہیں ۔ یہ مواقع اس وقت تک برقرار رہیں گے جبکہ اگلے چار پانچ سال میں ہما رے نوجوان حصول تعلیم سے فراغت حاصل کرلیں۔ یوں تو انٹرمیڈیٹ (10+2) کے بعد اپنا کیریئر بنانے کے بہت سے مواقع کھل جاتے ہیں۔ نوجوان اعلیٰ تعلیم کا اپنا کیریئر بنانے کی مناسبت سے انتخاب کریں۔ ہمارے ملک کی آبادی کا 1/3 حصہ نوجوانوں پر مشتمل ہے ۔ اگر نوجوان اپنی صلاحیتوں کو ملک کی ترقی میں استعمال کریں تو یقیناً ملک بہت تیزی سے ترقی کرے گا ۔ مگر اس کیلئے نوجوانوں کو تعلیم اور کیریئر کیلئے پلاننگ کی سخت ضرورت ہوتی ہے۔ ہر انسان کی عمر کا کچھ حصہ صرف تعلیم اور کیریئر بنانے کیلئے ہوتا ہے ۔ اگر ہم نے عمر کے اس حصے صحیح فائدہ نہیں اٹھایا تو ساری عمر پچھتانے سے کچھ حاصل نہیں ہوگا۔ آج مسابقتی کا زمانہ ہے ۔ نوجوانوں کو اپنے طور پر اس قابل بننا ہے بلکہ اس سے بھی آگے بڑھ جانے کی صلاحیت پیدا کرنا ہے ۔ اس کیلئے سخت محنت ڈسپلن کے ساتھ ساتھ اپنے مقصد کو پانے کا جنون ہونا چاہئے ۔ تب ہی کامیابی آپ کے قدم چومے گی۔ آج کے دور میں نئی نسل اعلیٰ تعلیم اور جدید معلومات کے ساتھ ساتھ اخلاقیات کی جانب توجہ دیں جو انسان کو خوش خلق اور اس کی شخصیت کو پر وقار اور ہردلعزیز بنانے میں نہایت اہمیت رکھتی ہیں۔
حکومت تلنگانہ اقلیتوں خاص کر مسلمانوں کی تعلیمی و معاشی پسماندگی کو دیکھتے ہوئے ان کی بھلائی کے کئی اقدامات کر رہی ہے جیسے اقلیتی اقامتی اسکولوں کا قیام جہاں بچوں کو کارپوریٹ طرز پر تعلیم دی جارہی ہے ۔ اقلیتی نوجوانوں کو بیرونی ملک تعلیم کیلئے اوورسیز اسکالرشپ، حصولِ روزگار کے لئے مفت کوچنگ کے انتظام کے ساتھ ساتھ اقلیتی نوجوانوں کو ان کی تعلیم اور روزگار سے متعلق رہبری کے لئے تلنگانہ مینارٹیز کیریئر کونسلنگ سنٹر کا قیام عمل میں لایا گیا ۔ جہاں اقلیتی نوجوانوں کو میٹرک سے لیکر پوسٹ گریجویشن تک تعلیم اور حصولِ روزگار میں ان کی رہبری کی جارہی ہے۔ اقلیتی نوجوان لڑکے / لڑکیاں اس کونسلنگ سنٹر سے استفادہ کرتے ہوئے اعلیٰ تعلیم ، حصول روزگار کے مواقع کے ساتھ ساتھ سرکاری اسکیمات کی مکمل جانکاری حاصل کرسکتے ہیں اور اس ویب سائیٹ imccc.telangana.gov.in سے بھپی استفادہ کرسکتے ہیں۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT