Friday , December 15 2017
Home / Top Stories / نوجوان نسل میں شراب نوشی کے بڑھتے رجحان پر وزیراعظم کو تشویش

نوجوان نسل میں شراب نوشی کے بڑھتے رجحان پر وزیراعظم کو تشویش

NEW DELHI, OCT 5 (UNI):- Prime Minister Narendra Modi addressing during inauguration of Umiya Dham Ashram via Video Conferencing, in New Delhi on Thursday. UNI PHOTO-4U

لعنت پر فوری قابو نہ پایا جائے تو 25 سال میں سماج تباہ ہوجائے گا،انتخابی حلقہ میں 14 مریض فوت

ہردوار۔5 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی نے نوجوان نسل میں بڑھتی شراب نوشی کے مسئلہ پر تشویش کا اظہار کیا اور کہا کہ اس لعنت پر فوری قابو نہ پایا جائے تو آئندہ 25 سال میں سماج تباہ و برباد ہوجائے گا۔ وہ آج ہردوار میں سماجی و مذہبی تنظیم امیا سنستھان سے تعلق رکھنے والے افراد سے خطاب کررہے تھے۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے ملک میں سیاحت کا روحانیت سے قدیم رشتہ قرار دیتے ہوئے آج کہا کہ یہ روحانیت کے مراکز سماجی اصلاحات کے مرکز رہے ہیں ۔مسٹر مودی نے ہردوار میں ماں امیا دھام آشرم کا ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ افتتاح کرتے ہوئے یہ بات کہی ۔انھوں نے کہا کہ ملک میں روحانیت کے ادارے سماجی اصلاحات کے مراکز رہے ہیں اور سیاحت کا تعلق روحانیت کی روایت سے رہا ہے ۔ اور سلسلہ قدیم زمانہ سے جاری ہے ۔ وزیر اعظم نے کہا کہ اس آشرم سے تیرتھ یاتریوں کو فائدہ ہوگا ۔انھوں نے کہا کہ تیرتھ کے ساتھ ساتھ سیاحت ہماری ثقافت کا حصہ رہا ہے اور اس سے ہم ملک کے ان حصو ں سے مانوس ہوتے ہیں جو ہم نے نہیں دیکھے ہیں ۔ مسٹر مودی نے ماں امیا کے بھکتوں کی خدمات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ان لوگوں نے انسانیت کی خدمت کی ہے اور لوگوں کو بھی اس کے لئے تحریک دی ہے ۔ان لوگوں نے صنفی مساوات کا پیغام بھی دیا ہے ۔انھوں نے مہسانہ کی عورتوں کی تعریف کی جنھوں نے بیٹی بچاؤ بیٹی پڑھاؤ کا پیغام سماج میں عام کیا ۔کانگریس نے اترپردیش کے شہر وارانسی میں سندرلال اسپتال میں انیستھیسیاکی جگہ انڈسٹری گیس دینے سے 14مریضوں کی موت کے لئے ریاستی حکومت کو ذمہ دار ٹھہراتے ہوئے آج وزیر صحت کو فورابرخاست کرنے اور وزیر اعلی یوگی اتیہ ناتھ کے استعفیٰ کا مطالبہ کیا ۔
کانگریس میڈیا سیل کے سربراہ رندیپ سنگھ سرجے والا نے یہاں صحافیوں سے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کے پارلیمانی حلقہ وارانسی کے سندرلال اسپتال میں سرجری کے لئے مریضوں کو انستھیسیا کی جگہ انڈسٹری گیس دی جارہی ہے ۔ اس سے پہلے جون میں اسی طرح سے مریضوں کے ساتھ کھلواڑ کرنے سے اس اسپتال میں 14لوگوں کی موت ہوگئی تھی ۔معاملہ الہ آباد ہائی کورٹ پہنچا تو اس کی جانچ کرائی گئی ۔ ترجمان نے کہا کہ ریاست میں مریضوں کے ساتھ مسلسل کھلواڑ ہورہا ہے ۔گورکھپور میں بچوں کی موت کے بعد ریاستی حکومت کی لاپروائی کا بڑا معاملہ اب وزیر اعظم کے پارلیمانی حلقہ میں سامنے آیا ہے ۔انھوں نے اسے سنگین جرم قراردیتے ہوئے وزیراعلی سے اخلاقی بنیاد پر استعفیٰ دینے کا مطالبہ کیا اور کہا ریاست کے وزیر صحت کو فورا برخاست کیا جانا چاہئے۔ ترجمان نے کہا کہ جانچ سے پتہ چلا ہے کہ انڈسٹری گیس کی سپلائی الہ آباد سے بی جے پی کے ایک رکن اسمبلی کی کمپنی کے ذریعہ کی جاتی ہے ۔اسے مجرمانہ غفلت قراردیتے ہوئے انھوں نے بی جے پی رکن اسمبلی اور اسپتال انتظامیہ کے خلاف بھی مقدمہ درج کرنے کا مطالبہ کیا ۔

 

TOPPOPULARRECENT