Wednesday , September 19 2018
Home / شہر کی خبریں / نونہالان ملت کو بنیادی تعلیم کی سخت ضرورت ، مسلمانوںکی ترقی حصول علم سے ہی ممکن

نونہالان ملت کو بنیادی تعلیم کی سخت ضرورت ، مسلمانوںکی ترقی حصول علم سے ہی ممکن

جامعہ نظامیہ اور سیاست کے دینی گرمائی کورس کا افتتاحی اجلاس ،مفتی خلیل احمد شیخ الجامعہ اور جناب میرعامر علی خاں نیوز ایڈیٹر روز نامہ سیاست کا خطاب

جامعہ نظامیہ اور سیاست کے دینی گرمائی کورس کا افتتاحی اجلاس ،مفتی خلیل احمد شیخ الجامعہ اور جناب میرعامر علی خاں نیوز ایڈیٹر روز نامہ سیاست کا خطاب

حیدرآباد ۔ 25 ۔ اپریل 🙁 سیاست نیوز )۔ روزنامہ سیاست اور علوم اسلامیہ کی عظیم دینی درسگاہ جامعہ نظامیہ کے زیر اہتمام 40 ؍ روزہ دینی تعلیمی گرمائی کورس کا افتتاحی اجلاس 25 ؍اپریل کو دفتر روزنامہ سیاست کے محبوب حسین جگر ہال میں منعقد ہوا ، مولانا مفتی خلیل احمد شیخ الجامعہ ‘جامعہ نظامیہ ذمہ داران مراکز ‘ اساتذہ کرام سے خطاب کرتے ہوئے فرمایا کہ آج کے اس پرفتن دور میں نونہا لان ملت کو علم دین کی بنیادی تعلیم کی سخت ترین ضرورت ہے کیونکہ آج ہرشخص اپنے بچوں کو دنیاوی تعلیم دلانے کیلئے جد وجہد کررہا ہے اور دینی تعلیم سے دوری اختیار کررہاہے یہ ایک نا پسندیدہ بات ہے دنیاوی تعلیم کے ساتھ ساتھ علم دین کی طلب نہایت ضروری ہے ، مولانا نے فرمایا جامعہ نظامیہ اور سیاست کی گذشتہ یہی کوشش ہے کہ نونہالان امت کو دینی تعلیم سے داقف کروایا جائے ، مولانانے ا ولیاء طلبا ء سے خواہش کی کہ وہ اپنے بچوں کو دینی گرمائی مراکز پر روانہ کریں اور بنیادی دینی تعلیم سے روشناس کروائیں ۔ مولانا نے کہا کہ دینی گرمائی کورس سے طلبہ کو فائدہ ہورہا ہے لیکن تناسب آبادی کے لحاظ سے کم ہے ، مفکر اسلام نے والدین اور ملت کے معززین سے خواہش کی کہ وہ علم دین کو حاصل کرنے نئی نسل کو راغب کریں اور جس طرح ان کے لئے مادی چیزوں مثلا غذا اور رہن سہن کا اہتمام کرتے ہیں ٹھیک اسی طرح اسلام کے بنیادی مسائل کوجاننے اور دینی بنیادی تعلیم حاصل کرنے کا ذوق وشوق پیدا کریں ‘ گرمائی تعطیلات عصری تعلیم کے طلبہ کو دینی بنیادی تعلیم حاصل کرنے کا بہترین موقع ہے ۔ والدین اپنے بچوں پر توجہہ دیں اور اپنے قریب کے مرکز پر بچوں کوروانہ کریں طلبہ سے کسی قسم کی کوئی فیس نہیں لی جاتی ، مولانا نے کہا کہ جامعہ نظامیہ اور سیاست مشترکہ طور گذشتہ تیرہ سال سے اساتذہ کا خرچ برداشت کررہے ہیں اور انشاء اللہ یہ سلسلہ جاری رہے گا ۔ مولانا نے مسرت کا اظہار کیا کہ دینی گرمائی کورس کی یہ مہم اضلا ع سے آگے بڑھ کر بیرون ریاست کرناٹک اور مہاشٹرا میں بھی داخل ہو چکی ہے ، مولانا اساتذہ پر زور دیا کہ وہ ملت کی خدمت کے جذبہ کے تحت کام کریں اور محنت سے طلبہ کو تیار کریں اور40 روز مسلسل تعلیم دیں اور اس بات کی کوشش کریں کہ کوئی دن بھی ناغہ نہ ہو ‘ جناب میرعامر علی خاں نیوز ایڈیٹر روزنامہ سیاست نے اپنے خطاب میں فرمایا کہ ادارہ سیاست اور جامعہ نظامیہ کی جانب سے گرمائی دینی تعلیمی کورس شروع کرنے کا مقصد یہ ہے کہ جو بچے تمام سال دنیاوی تعلیم کے حصول میں مصروف رہتے ہیں وہ کم از کم تعطیلات کے زمانے میں اسلامی بنیادی دینی تعلیم سے واقف ہوجائیں ۔ نیوز ایڈیٹر سیاست نے کہا کہ اضلاع ‘تعلقہ جات اور دیہاتوں میں علم دین کی سخت ضرورت ہے اس لئے سال حال اضلاع میں زیادہ سے زیادہ مراکز قائم کرنے پر توجہہ دی جارہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مظفر نگر میں ایک ایسا مقام بھی ہے جہاں کوئی مدرسہ نہیں ہے۔ الحمدللہ جامعہ نظامیہ ادارہ سیاست کی اس کوشش میں برابر تعاون کررہا ہے اور یہ سلسلہ دس سال سے چل رہا ہے سالحال 26 ؍اپریل تا 3؍جون2015 ء دینی گرمائی کورس کے مراکز کام کریں گے اور ناظر حضرات بھی مرکز کا دورہ کرتے رہیں گے اپنے سلسلہ خطاب میں جناب عامرعلی خاں نے مزید جامعہ نظامیہ اور محترم مفتی کے تعاون کا شکریہ اداکیااور فرمایا کہ اولیاء طلباء کو اس جانب توجہہ دینے کی ضرورت ہے اور بچوں کو بھی علم کے حاصل کرنے میں سبقت لیجانا چاہئے۔ جناب عامر علی خاں نے اساتذہ کرام پر زور دیا کہ وہ طلبہ جو بنیادی دینی تعلیم کے ذریعہ ایک پکا مسلمان بنائیں اور مزیدبتلایا کہ سال حال حیدرآبادوسکندرآباد میں 106 جب کہ اضلاع میں 93مراکز کا قیام عمل میں آیا۔ اس موقع پر 40 روزہ دینی گرمائی کورس کے نصاب کی کتاب کی رسم اجراء بدست شیخ الجامعہ و جناب عامر علی خاں عمل میں آئی۔ جلسہ کی کاروائی کا آغاز مولوی سیدتوفیق اللہ بخاری کی قرأت قرآن مجید اورمحمد ابراہیم کی نعت شریف سے ہوا ، مولانا حافظ محمد عبید اللہ فہیم قادری الملتانی منتظم جامعہ نظامیہ نے کاروائی چلائی ۔جلسہ میں جناب میر شجاعت علی جنرل مینجر روزنامہ سیاست کے علاوہ مولانامحمد امتیاز احمد داروغہ جامعہ ‘ مولانا شیخ محبوب مودب جامعہ ‘ذمہ داران مراکز دینی تعلیم کورس حیدرآباد و سکندرآباد ، اضلاع‘ اساتذہ کرام مراکز اور اولیائے طلباء کی کثیر تعداد موجود تھی۔

TOPPOPULARRECENT