Thursday , December 14 2017
Home / ہندوستان / نوٹوں کی تنسیخ اور جی ایس ٹی پر پرتھوی راج چاوان کی تنقید

نوٹوں کی تنسیخ اور جی ایس ٹی پر پرتھوی راج چاوان کی تنقید

سابق چیف منسٹر مہاراشٹرا کا مرکزی حکومت پر ان شعبوں سے مکمل ناواقفیت کا الزام
ممبئی ۔ 22اکٹوبر ( سیاست ڈاٹ کام ) سابق چیف منسٹر مہاراشٹرا پرتھوی راج چاوان نے این ڈی اے حکومت کے نوٹوں کی تنسیخ اور اشیاء اور خدمات ٹیکس ( جی ایس ٹی ) کے نفاذ کی بناء پر حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ یہ معیشت پر حملے ہیں ۔ حکومت نے غلطی سے کرنسی کو کالا دھن سمجھ لیا تھا اور اسے نقد رقم میں تبدیل کرنے سے قاصر رہی ۔ انہوں نے کہا کہ بعض اوقات ہنگامی صورتحال میں دفعات وضع کی جاتی ہے لیکن حکومت نے اس پہلو کو نظرانداز کردیا اور نوٹوں کی تنسیخ کے اقدام پر پیشرفت کی اب ہر ایک جانتا ہے کہ نوٹوں کی تنسیخ کا اقدام بری طرح ناکام ہوچکا ہے ۔ وہ کرڑ میں ضلع ستارہ کا آبائی قصبہ ہے ایک پریس کانفرنس سے خطاب کررہے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی زیرقیادت مرکزی حکومت بھی ناکام ہوگئی ۔ وہ مناسب نظام قائم نہیں کرسکی جو جی ایس ٹی پر عمل آوری اور اسکے نفاذ کیلئے ضروری تھا ۔ انہوں نے کہا کہ اب جی ایس ٹی معیشت کو متاثر کررہا ہے ۔مودی حکومت کے یہ دونوں اقدامات معیشت پر حملے ہیں ۔ حکومت نے مکمل طور پر کالا دھن کو نظرانداز کردیا حالانکہ یہ جائیداد ‘ زیورات اور دیگر اشیاء کی شکل میں بھی ہوسکتا ہے ۔ اسے اراضی کی خریداری یا زیورات کی خریداری کیلئے بھی استعمال کیا جاسکتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ایسا معلوم ہوتا ہے کہ یہ اقدام ان شعبوں سے مکمل طور پر ناواقفیت کا نتیجہ ہے یا پھر حکومت نے اعلیٰ مالیتی کرنسی نوٹوں کو منسوخ کرنے سے پہلے ان کی تبدیلی پر توجہ مرکوز نہیں کی تھی یا پھر وہ اس شعبہ سے پوری طرح ناواقف تھی۔
انہوں نے کہا کہ ملک گیر سطح پر کانگریسی قائدین ایسی حکمت عملیوں پر عمل کررہے ہیں جس کے ذریعہ بی جے پی حکومت کے ان محاذوں پر اقدامات کا سامنا کیا جائے ۔ حکومت کی جانب سے مرکزی وزیر فینانس ارون جیٹلی خاص طور پر جی ایس ٹی کی مدافعت کرتے رہے ہیں ان کا کہنا ہے کہ معیشت کا انحطاط عارضی ہے اور آئندہ چند دنوں میں جی ایس ٹی کے فوائد منظر عام پر آجائیں گے ‘ جیٹلی کا یہ تیقن بھی مودی کے اچھے دن کے تیقن جیسا معلوم ہوتا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT