Saturday , November 18 2017
Home / Top Stories / نوٹ بندی سے مشکلات پر بینک ملازمین کا احتجاج کا فیصلہ

نوٹ بندی سے مشکلات پر بینک ملازمین کا احتجاج کا فیصلہ

ڈپازٹ کے نئے مشکل شرائط پر صارفین برہم
ودودرہ 20 ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) آل انڈیا بینک ائمپلائز اسوسی ایشن اور آل انڈیا بینک آفیسرس اسوسی ایشن نے نوٹ بندی کی وجہ سے مختلف بینکوں اور ان کے ملازمین کو ہو رہی مشکلات کے خلاف مظاہروں کا اعلان کیا ہے ۔ جو احتجاجی پروگرامس طئے کئے گئے ہیں ان میں 28 ڈسمبر کو مظاہرہ بھی شامل ہے ۔ اس کے بعد یونینوں کی جانب سے وزیر فینانس ارون جیٹلی کے نام 29 ڈسمبر کو ایک مکتوب روانہ کیا جائیگا ۔ یونین کے ارکان اس مسئلہ 2 اور 3 جنوری 2017 کو بھی احتجاجی مظاہروں کا منصوبہ رکھتے ہیں۔ آل انڈیا بینک ائمپلائز اسوسی ایشن کے جنرل سکریٹری سی ایچ وینکٹ چلم نے اور بینک آفیسرس اسوسی ایشن کے جنرل سکریٹری ایس ناگراجن نے آج جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ ہماری تنظیموں کی جانب سے اعلان کے مطابق ہماری یونٹیں تمام بڑے مراکز پر مظاہروں کا اہتمام کر رہی ہیں اور وہ ریزرو بینک کے مقامی حکام سے ملاقات کرتے ہوئے یادداشتیں حوالے کر رہی ہیں۔ یونینوں نے مرکز سے مطالبہ کیا کہ تمام بینک برانچس پر وافر مقدار میں کرنسی اور نقدی فراہم کی جائے ۔ تمام اے ٹی ایمس کو کسی تاخیر کے بغیر بحال کیا جائے اور بینکوں کو رقم کی فراہمی میں شفافیت برتی جائے ۔ ممبئی سے موصولہ اطلاع کے بموجب مقامی شہری پرانے کرنسی نوٹوں کو اپنے کھاتوں میں جمع کرنے کی نئی سخت شرائط پر بے حد برہم ہیں۔ کرلا میں ایک وظیفہ یاب ٹی ایم مشرا نے کہا کہ انہیں ان قواعد سے شدید صدمہ پہنچا ہے۔ بینکوں کی شاخوں اور اے ٹی ایمس پر قطاروں میں قابل لحاظ کمی آئی ہے۔ دریں اثناء مرکزی وزیر فینانس ارون جیٹلی نے بینکوں کو مشورہ دیا کہ وہ آزاد خیالی سے کام لیں اور صارفین کے ساتھ تعاون کریں۔

TOPPOPULARRECENT