Saturday , February 24 2018
Home / شہر کی خبریں / نوٹ بندی کا ایک سال ۔ آج سارے تلنگانہ میں کانگریس کا یوم سیاہ ۔ نیکلس روڈ پر ریلی ‘ پیپلز پلازہ پر جلسہ

نوٹ بندی کا ایک سال ۔ آج سارے تلنگانہ میں کانگریس کا یوم سیاہ ۔ نیکلس روڈ پر ریلی ‘ پیپلز پلازہ پر جلسہ

 

حیدرآباد 7 نومبر (سیاست نیوز) تلنگانہ پردیش کانگریس نے نوٹ بندی کے ایک سال کی تکمیل پر 8 نومبر کو سارے تلنگانہ میں یوم سیاہ منانے کا فیصلہ کیا ہے۔ حیدرآباد نیکلس روڈ پر واقع پیپلز پلازہ پر احتجاجی جلسہ منعقد کیا جائیگا جس میں کانگریس کے تمام سینئر قائدین شرکت کرینگے ۔ سابق وزیر ڈی ناگیندر نے میڈیا سے کہاکہ وزیراعظم نریندر مودی نے ایک سال قبل اچانک نوٹ بندی کا اعلان کرکے ملک کے عوام کو پریشان کردیا۔ مرکز کے فیصلے سے ملک کی معیشت تباہ و برباد ہوگئی جس کے خلاف 8 نومبر کو دوپہر ڈھائی بجے نیکلس روڈ پر واقع مجسمہ اندرا گاندھی کی گلپوشی کرتے ہوئے احتجاجی ریالی منظم کی جائے گی جو پیپلز پلازہ پہونچ کر جلسہ عام میں تبدیل ہوجائیگی۔ جلسہ میں انچارج سکریٹری آر سی کنٹیا، صدر تلنگانہ پردیش کانگریس اتم کمار ریڈی، ورکنگ پریسڈنٹ ملوبٹی وکرامارک، قائدین اپوزیشن جانا ریڈی (اسمبلی) ، محمد علی شبیر (کونسل) کے علاوہ دیگر قائدین شرکت کرینگے ۔ ناگیندر نے عوام اور کانگریس کارکنوں کو جلسہ عام میں شرکت کرکے کامیاب بنانے کی اپیل کی۔ ترجمان اعلیٰ پردیش کانگریس شرون کمار نے کہاکہ 8 نومبر کو ریاست کے تمام اضلاع و منڈل ہیڈ کوارٹرس پر کانگریس کی جانب سے دھرنے منظم کرتے ہوئے یوم سیاہ منایا جائیگا۔ تمام اضلاع صدور نے احتجاجی پروگرامس کو کامیاب بنانے کی حکمت عملی تیار کرلی ہے۔ سابق وزیراعظم ڈاکٹر منموہن سنگھ نے کامیاب معاشی پالیسی تیار کرکے ملک کے معاشی نظام کو فائدہ پہونچایا تھا۔ تاہم مٹھی بھر صنعت کاروں کو فائدہ پہنچانے مودی نے نوٹ بندی کا اعلان کرکے عوام کو پریشان کردیا۔ وزیراعظم نے ملک کے عوام سے صرف 50 دن کی مہلت طلب کی تھی۔ ایک سال مکمل ہونے کے باوجود ملک کی معاشی صورتحال جوں کا توں برقرار ہے۔ چھوٹی بڑی انڈسٹری بند ہوجانے سے لاکھوں افراد بے روزگا ر ہوگئے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT