Tuesday , November 21 2017
Home / شہر کی خبریں / نوٹ بندی کا فیصلہ واپس نہیں ہوگا ‘ چیف سکریٹری

نوٹ بندی کا فیصلہ واپس نہیں ہوگا ‘ چیف سکریٹری

ملازمین سے نقد لین دین سے پاک تلنگانہ بنانے میں تعاون پر زور
حیدرآباد ۔ 3 ۔ دسمبر : ( سیاست نیوز ) : چیف سکریٹری تلنگانہ پردیپ چندرا نے نوٹ بندی کا فیصلہ واپس نہ ہونے کا ادعا کرتے ہوئے سرکاری ملازمین کو نقد رقمی لین دین سے پاک تلنگانہ بنانے میں تعاون پر زور دیا ۔ نوٹ بندی کے بعد سکریٹریٹ ایمپلائز کو ڈیجیٹل لین دین کی تربیت کیلئے منعقد پروگرام سے خطاب میں چیف سکریٹری نے کہا کہ یہ حقیقت ہے نوٹ بندی کا فیصلہ ہوچکا ہے اور اس میں کوئی تبدیلی نہیں ہوگی بلکہ نقدی لین دین کیلئے جو مسائل پیدا ہوئے ہیں اسے چیلنج کی طرح قبول کرکے اپنانے کی ضرورت ہے ۔ ای بینکنگ کی سہولتوں سے استفادہ کرنا چاہئے کہ اور اس کی عادت ڈال لینی چاہئے ۔ ای بینکنگ پر شبہات کی ضرورت نہیں ہے ۔ کئی سیکوریٹی فیچرس ہیں اور سیفٹی کے ساتھ لین دین کرنے سہولتیں ہیں ۔ سماج میں اکثریت اسمارٹ فون اور اسکے استعمال سے واقف ہے ۔ ڈیجیٹل سہولت سے استفادہ پر ہمیں زیادہ لوگوں سے رابطہ میں آسانی ہوگی ۔ ای بینکنگ کو تحریک کے طور پر اپنانے کا ایمپلائز اور عوام کو مشورہ دیا ۔ حکومت کے مشیر اعلیٰ راجیو شرما نے کہا کہ نوٹ بندی کے بعد ہندوستان نقد رقمی لین دین سے پاک نظام کی طرف گامزن ہے ۔ جس سے ہر کوئی نقد رقمی لین دین سے پاک سسٹم کو اہمیت دیتے ہوئے کیاش لیس منی کے سسٹم سے استفادہ کریں کمشنر اطلاعات و تعلقات عامہ نوین متل نے کہا کہ حکومت نے تلنگانہ کو نقد رقمی لین دین سے پاک بنانے کا فیصلہ کیا ہے ۔ ملازمین حکومت سے تعاون کریں ۔ ایمپلائز کو مختلف بینکوں سے کیاش لیس منی کی سہولتوں استفادہ کی معلومات فراہم کی گئیں۔

TOPPOPULARRECENT