Thursday , December 14 2017
Home / شہر کی خبریں / نوٹ بندی کے خلاف ’’مودی ہٹاؤ دیش بچاؤ نعرے‘‘

نوٹ بندی کے خلاف ’’مودی ہٹاؤ دیش بچاؤ نعرے‘‘

مرکز کے اقدام کے خلاف تلنگانہ و آندھراپردیش میں کانگریس کا احتجاج، قائدین کا خطاب
حیدرآباد7جنوری (یواین آئی )نوٹ بندی کے خلاف کانگریس کی جانب سے تلنگانہ اورآندھراپردیش میں احتجاج کیاگیا۔تلنگانہ کے رنگاریڈی ضلع کے کلکٹریٹ کے سامنے دھرنا دیا گیا ۔ اس موقع پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے متحدہ آندھراپردیش کی سابق وزیر داخلہ و کانگریس لیڈر سبیتا اندرا ریڈی نے کہا کہ بڑی نوٹوں کی منسوخی سے عام آدمی کو شدید مشکلات کا سامنا ہے ۔ انہو ں نے کہا کہ نوٹ بندی کے بعد وزیر اعظم نے 50دن مانگے تھے لیکن دو ماہ ہونے آئے ہیں لیکن اب تک بینکس سے رقم نکالنے کی حد میں خاطر خواہ اضافہ نہیں ہوا اور عوام کے مسائل میں کمی نہیں آئی اور انہوں نے سوال کیا کہ ان 50دنوں میں کتنا کالا دھن ملک کو لایا گیا ‘ کالا دھن رکھنے والے کتنے افراد کے خلاف کارروائی کی گئی اس پر وائٹ پیپر جاری کیا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ پارٹی کے نائب صدر راہل گاندھی یہ بار بار کہہ رہے ہیں کہ کانگریس کالا دھن لانے کی مخالف نہیں ہے لیکن اس کیلئے صحیح طریقہ کار اور منصوبہ پر عمل کرنا چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ نوٹ بندی کے خلاف ہائی کمان کی ہدایت پر یہ دھرنا دیا گیا ہے ۔ اس موقع پر کانگریس کارکنوں نے مرکزی حکومت کے خلاف برہمی ظاہر کی اور مودی ہٹاو دیش بچاؤ کے نعرے لگائے ۔ دوسری طرف نوٹ بندی کے خلاف آندھراپردیش کے وشاکھا پٹنم میں کانگریس کے لیڈروں اور کارکنوں نے احتجاج کیا ۔ اس موقع پر ریلی نکالی گئی اور وشاکھا پٹنم کلکٹریٹ کے سامنے مظاہرہ کیا گیا ۔ اس موقع پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے سابق وزیر بالا راجو نے کہا کہ نوٹ بندی سے ملک میں تمام کو مشکلات کا سامنا ہے ۔ پریشانیوں کے شکار عوام کے ساتھ کانگریس ہے ۔ سونیا گاندھی اور راہل گاندھی کی قیادت میں ملک بھر میں وزیر اعظم مودی کے اس قدم کے خلاف عوام کی حمایت میں مظاہرے کئے جارہے ہیں۔ انہوں نے واضح کیا کہ عوام کو ان کی رقم ہی بینکس سے نکالنے میں مشکلات کاسامنا ہے ۔ انہو ں نے سوال کیا کہ نوٹ بندی کے خلاف ملک میں کتنا کالا دھن لایا گیا اور کالا دھن رکھنے والے کتنے افراد کے خلاف کارروائی کی گئی ۔

TOPPOPULARRECENT