Tuesday , August 14 2018
Home / Top Stories / نو قائم شدہ ایس سی ، ایس ٹی کمیشن کے دفتر کا افتتاح

نو قائم شدہ ایس سی ، ایس ٹی کمیشن کے دفتر کا افتتاح

سوامی گوڑ ، محمود علی ، نرسمہا ریڈی اور ہریش راؤ کی شرکت ، نئے صدرنشین سرینواس کو مبارکباد
حیدرآباد ۔ 18 ۔ جولائی (سیاست نیوز) ریاست میں نو قائم شدہ ایس سی ، ایس ٹی کمیشن کے دفتر کا آج صدرنشین قانون ساز کونسل سوامی گوڑ نے پرشرما بھون بشیر باغ میں افتتاح کیا ۔ اس موقع پر ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی ، ریاستی وزراء ہریش راؤ ، این نرسمہا ریڈی ، گورنمنٹ چیف وہپ پی سدھاکر ریڈی ، آر ٹی آئی چیف راجہ سدارام ، بی سی کمیشن کے صدرنشین بی ایس راملو اور مختلف کارپوریشنوں کے صدورنشین اور ارکان مقننہ موجود تھے۔ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے ریاست میں ایس سی ، ایس ٹی طبقات کو ان کے جائز حقوق فراہم کرنے کیلئے کمیشن کا قیام عمل میں لایا اور ای سرینواس کو صدرنشین مقرر کیا گیا ۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے وزیر داخلہ این نرسمہا ریڈی نے ایس سی ، ایس ٹی کمیشن کے قیام پر چیف منسٹر کو مبارکباد پیش کی ۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ تحریک میں اہم رول ادا کرنے والے ای سرینواس کو صدرنشین مقرر کیا جانا باعث اطمینان ہے۔ متحدہ آندھراپردیش میں یہ کمیشن موجود تھا یا نہیں عوام بھی واقف نہیں تھے لیکن چیف منسٹر نے کمیشن کیلئے وسیع تر آفس الاٹ کیا ہے جس سے ایس سی ، ایس ٹی طبقات سے وابستہ افراد استفادہ کرسکتے ہیں۔ نرسمہا ریڈی نے کہا کہ سابقہ حکومتوں نے دعویٰ کیا تھا کہ تلنگانہ ریاستوں کی تشکیل کے بعد حکمرانی کرنا آسان نہیں رہے گا لیکن کے سی آر نے اس نظریہ کو غلط ثابت کردیا ہے۔ چیف منسٹر نے فلاحی اقدامات میں ملک بھر میں نمایاں مقام حاصل کیا۔ نرسمہا ریڈی نے کہا کہ تلنگانہ تحریک کے دوران سرینواس اسٹوڈنٹ لیڈر کی طرح ہمارے ساتھ موجود تھے۔ حالیہ عرصہ تک وہ پارٹی میں پولیٹ بیورو رکن رہے۔ انہوں نے کمیشن کو محکمہ داخلہ سے ہر ممکن تعاون کا یقین دلایا ۔ انہوں نے کہا کہ ایس سی ، ایس ٹی طبقات کے ساتھ کہیں بھی ناانصافی نہیں ہوگی۔ ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی نے سرینواس کو مبارکباد پیش کی اور کمیشن کی بہتر کارکردگی کیلئے نیک تمناؤں کا اظہار کیا ۔ انہوں نے کہا کہ ایس سی ، ایس ٹی طبقات کے ساتھ جہاں بھی ناانصافی ہوئی سرینواس وہاں ناانصافیوں کے خلاف کھڑے دکھائی دیئے ۔ صدرنشین ایس سی ، ایس ٹی کمیشن ای سرینواس نے بتایا کہ کمیشن کیلئے وسیع آفس کی ضرورت کے سلسلہ میں جب چیف منسٹر کو واقف کرایا گیا تو انہوں نے فوری تجویز سے اتفاق کرلیا ۔ انہوں نے کہا کہ 2003 ء میں کمیشن کا قیام عمل میں آیا لیکن 2014 ء تک کمیشن نے کوئی کام انجام نہیں دیا۔ متحدہ آندھرا کے قائدین کو کمیشن میں نمائندگی دی گئی تھی۔ متحدہ آندھرا میں ایس سی ، ایس ٹی طبقات کے ساتھ ناانصافی کی گئی لیکن چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے تلنگانہ میں کئی فلاحی اسکیمات کا آغاز کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ دلتوں کے ساتھ جہاں بھی ناانصافی ہوگی ، کمیشن اس کے خلاف آواز اٹھائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ایس سی ، ایس ٹی طبقات اپنے مسائل کیلئے بلا جھجھک رجوع ہوسکتے ہیں۔ انہوں نے کمیشن کا صدرنشین نامزد کرنے پر چیف منسٹر کے سی آر سے اظہار تشکر کیا۔

TOPPOPULARRECENT