Wednesday , June 20 2018
Home / ہندوستان / نو منتخب ارکان کا خیر مقدم کرنے لوک سبھا سیکریٹریٹ سرگرم

نو منتخب ارکان کا خیر مقدم کرنے لوک سبھا سیکریٹریٹ سرگرم

نئی دہلی 15 مئی ( سیاست ڈاٹ کام ) لوک سبھا سیکریٹریٹ نے منتخب ہونے والے نئے ارکان کے خیر مقدم کیلئے تقریبا تمام تیاریاں مکمل کرلی گئی ہیں۔ کہا گیا ہے کہ نئے منتخب ہونے والے ارکان کو ہر طرح کی مدد فراہم کرنے کے انتظامات کرلئے گئے ہیں۔ لوک سبھا کے سکریٹری جنرل پی سریدھرن نے اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے یہ اطلاع دی ۔ انہوں نے کہا ک

نئی دہلی 15 مئی ( سیاست ڈاٹ کام ) لوک سبھا سیکریٹریٹ نے منتخب ہونے والے نئے ارکان کے خیر مقدم کیلئے تقریبا تمام تیاریاں مکمل کرلی گئی ہیں۔ کہا گیا ہے کہ نئے منتخب ہونے والے ارکان کو ہر طرح کی مدد فراہم کرنے کے انتظامات کرلئے گئے ہیں۔ لوک سبھا کے سکریٹری جنرل پی سریدھرن نے اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے یہ اطلاع دی ۔ انہوں نے کہا کہ ارکان پارلیمنٹ کو دارالحکومت میں آمد کے بعد کسی طرح کی مشکل نہ ہو اس بات کو یقینی بنانے کیلئے مناسب انتظامات کئے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ نئی دہلی ‘ پرانی دہلی اور حضرت نظام الدین ریلوے اسٹینشوں پر ارکان پارلیمنٹ کی مدد کیلئے چھ گائیڈ پوسٹس قائم کئے گئے ہیں۔

اس کے علاوہ اندرا گاندھی انٹرنیشنل ائرپورٹ پر بھی اسی طرح کا پوسٹ قائم کیا گیا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ یہ گائیڈ پوسٹس 16 مئی سے کارکرد ہوجائیں گے اور 21 مئی تک کام کرینگے ۔ اس کے علاوہ 16 ویں لوک سبھا کے پہلے سشن کے ابتدائی تین دن بھی انہیں کارکرد رکھا جائیگا۔ جہاں تک نو منتخب ارکان پارلیمنٹ کی رہائش کا سوال ہے انہیں ان کی ریاستوں اور مرکزی زیر انتظام علاقوں کے بھونس میں رکھنے کے علاوہ اشوکا ہوٹل میں قیام کروانے کے انتظامات کئے گئے ہیں۔ ڈائرکٹوریٹ آف ایسٹیٹ اینڈ ہاوز کمیٹی اپنی تشکیل کے بعد ارکان پارلیمنٹ کے گھروں کی ضروریات کا مستقبل بنیادوں پر حل دریافت کریگی ۔ یہ امکان بھی ہے کہ جو ارکان پارلیمنٹ اس بار منتخب نہیں ہورہے ہیں وہ نئے ارکان کیلئے اپنے مکانات اور فلیٹس کا تخلیہ کردینگے ۔ جو ارکان اس بار منتخب نہیں ہونگے

وہ ایک ماہ تک ان گھروں میں مقیم رہ سکتے ہیں۔ اس کے بعد انہیں ان مکانات کا تخلیہ کرنا ہوگا ۔ پروٹیم اسپیکر کے تقرر کے تعلق سے انہوں نے کہا کہ یہ سب کچھ کرنا وزارت پارلیمانی امور کی ذمہ داری ہے ۔ سینئر ارکان میں سے کسی کو منتخب کرنے کا طریقہ کار رہا ہے ۔ ایوان کے شیڈول پر فیصلہ کے بعد حکومت پروٹیم اسپیکر کے تعلق سے فیصلہ کرسکتی ہے ۔ لوک سبھا سشن کی طلبی کی تواریخ کے تعلق سے سریدھرن نے کہا کہ ان تواریخ کے تعلق سے حکومت فیصلہ کریگی ۔ 16 ویں لوک سبھا کا اجلاس 31 مئی سے قبل طلب کیا جانا چاہئے کیونکہ پندرہویں لوک سبھا کا پہلا اجلاس یکم جون 2009 کو منعقد ہوا تھا اور پانچ سال کی معیاد 31 مئی کو ختم ہونے والی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT