Thursday , December 14 2017
Home / شہر کی خبریں / نکاح سنت ، اسلامی طریقہ سے انجام دینے کی تلقین

نکاح سنت ، اسلامی طریقہ سے انجام دینے کی تلقین

محمد عبدالحکیم کے فرزند کی سادگی میں شادی ، سرکردہ شخصیتوں کی شرکت، مشتاق ملک کا خطاب
حیدرآباد۔2مارچ(سید اسمعیل ذبیح اللہ)۔ تعلیم یافتہ ‘ قابل ہونہار اور امریکہ میںمقیم نوجوان کی شادی تقریب انتہائی سادگی سے عمل میں آئی ۔ شادی چہارشنبہ کے روز شاہی مسجد باغ عامہ میں بعد نماز عصر انجام پائی ۔ نوشہ محمد عبدالرحیم بی ٹیک ‘ ایم ایس حال مقیم امریکہ والد محمد عبدالحکیم سابق نائب صدر نشین اُردو اکیڈیمی آندھرا پردیش کا نکاح جناب محمد عبدالصمد کی دختر سے انجام پائی اس تقریب نکاح شہر حیدرآباد کی او رتلنگانہ کے مختلف اضلاع کی مذہبی ‘ سماجی اور سیاسی سرکردہ شخصیتوں نے شرکت کی جن میںقابل ذکر نام جناب سید یوسف علی سابق رکن اسمبلی ‘مفتی غیاث الرحمان‘ ڈاکٹر فخر الدین ‘ چنتا پربھاکر رکن اسمبلی سنگاریڈی‘ جناب ایم اے رحمن مارکٹ کمیٹی چیرمن سنگا ریڈی‘ محمد خواجہ ‘ خواجہ اسداللہ ‘ محمد نعیم ‘ افتخار احمد ایڈوکیٹ‘ محمد امیرالدین ایڈوکیٹ کے علاوہ دیگر نے بھی شرکت کی جن کی ضافت کھارا‘ بسکٹ ا ور چائے کے ذریعہ کی گئی ۔ خطبہ نکاح پروفیسر راشد نسیم ندوی نے پڑھا جس کے فوری بعدموجودہ دور میںنکاح کو آسان بنانے کے لئے درکاراصلاحات او رشادیوں میں بیجااصراف سے اجتناب‘ رسم و رواج کے نام پر فضول خرچی ‘ ہمہ اقسام کے کھانوں سے مہمانوں کی ضیافت او رکھانے کی بربادی جیسے حساس موضوعات پر جلسہ اصلاح معاشرہ کا بھی انعقاد عمل میںلایاگیا۔ جناب محمدمشتاق ملک نے خطاب کے دوران کہاکہ شادیوں میںبیجا اصراف سے اجتناب بالخصوص ہمہ اقسام کے کھانوں کا پکوان کرتے ہوئے رزق کی بربادی سے بچنا ضروری ہے۔ انہوں نے مزیدکہاکہ نوجوان محمد عبدالرحیم کا اقدام قابلِ ستائش ہے جنھوں نے آج کے دور میں مثالی شادی کے ذریعہ نوجوانوں کو ایک پیغام دیا ہے کہ نکاح ایک ایسی سنت ہے جس کواسلامی طریقے سے انجام دینا ضروری ہے ۔انہوں نے کہاکہ مسجد میںنکاح کا اہتمام بھی ایک پیغام ہی ہے ۔ جناب محمدمشتاق ملک نے کہاکہ اس قسم کی شادیوں کی تقاریب مسلم معاشرے میںانقلاب کا نقیب ثابت ہونگی۔ انہوں نے مسلم نوجوانوں سے ایسی مثالی شادیوں کا اہتمام کرنے کی اپیل کی ہے۔ ڈاکٹر اسلام الدین مجاہد نے جلسہ اصلاح معاشرہ سے خطاب کرتے ہوئے عصر حاضرکی شادیوںمیںبڑھتے خرافات کو باعث تشویش قراردیا۔انہوں نے کہاکہ نکاح کے لئے اس قدر خرچ ایک فکر انگیز لمحہ ہے ۔ڈاکٹر اسلام الدین مجاہد نے نوجوانوں سے اپیل کرتے ہوئے کہاکہ وہ شادی کی سنت کو آسان سے آسان تر بنانے کاکام کریں تاکہ ملت اسلامیہ کے سلگتے ہوئے مسائل کا آسان کا حل نکالا جاسکے۔ جناب محمدعبدالحکیم والد نوشہ وسابق نائب صدر نشین اُردو اکیڈیمی آندھرا پردیش نے بتایا کہ لڑکی والوں کے بے حد اصرار کے باوجود انہوں نے گھوڑے جوڑے ‘ جہیز کا کوئی بھی ساما ن لینے سے انکارکردیا۔ جناب محمد عبدالحکیم نے کہا کہ ہمارا مقصد صرف یہی ہے کہ ہم جو تحریک ادارہ سیاست کے ایڈیٹر جناب زاہد علی خان صاحب نے شروع کی ہے اس کو کامیاب بناتے ہوئے مسلم معاشرے میںشادیوں کے نام پر بیجا اصراف کے ذریعہ بڑھتے بگاڑ کو ختم کرنا ہے ۔ انہوں نے دولہا او ردولہن کے حق میںنیک تمنائوں ‘ رشتہ ازدواج میںتقویت کے لئے دعائوں کی گذارش کی ہے۔

TOPPOPULARRECENT