Tuesday , December 12 2017
Home / شہر کی خبریں / نکاح کو آسان بنانے ’سیاست‘ کی مہم کا اثرنکاح کو آسان بنانے ’سیاست‘ کی مہم کا اثرجناب زاہد علی خاں کی تحریک پر سادگی میں شادی، ایک قاری کا کھلا مکتوب از :

نکاح کو آسان بنانے ’سیاست‘ کی مہم کا اثرنکاح کو آسان بنانے ’سیاست‘ کی مہم کا اثرجناب زاہد علی خاں کی تحریک پر سادگی میں شادی، ایک قاری کا کھلا مکتوب از :

محمد عبدالغفور ابوالعلائی   بمقام:  حیدرآباد                 مورخہ:  18-10-17 السلام علیکم ، محترم عالی مقام جناب زاہد علی خاں صاحب ایڈیٹر روز نامہ ’سیاست‘ حیدرآبادسب سے پہلے اللہ کا شکر ادا کرتا ہوں کہ آپ کو قوم و ملت کی بے لوث خدمت کیلئے چن لیا ہے اور آپ اپنا پورا پورا حق ادا کررہے ہیں، آپ کی اس خدمت سے کئی لوگوںکی قسمت بدل رہی ہے، خاص کر تعلیمی میدان میں جہاں اس جذبہ خدمت سے بچے ڈاکٹر، انجینئر، پائیلٹ اور محکمہ پولیس میں ملازمت کررہے ہیں ۔ دوسری اہم بات یہ کہ آپ کے شروع کردہ رشتوں کا پروگرام دوبہ دو ملاقات میں کئی پریشان حال لوگوں کا مسئلہ حل ہورہا ہے۔ کئی لڑکیوں کے رشتے بغیر کسی لین دین کے طئے ہورہے ہیں۔اللہ آپ کو نظربد سے محفوظ رکھے ، صحت تندرستی کے ساتھ اسی طرح قوم و ملت کی خدمت انجام دینے رکھے ، آمین ۔ آپ کیلئے دعائیں ہی دعائیں ہیں۔ میں بھی آپ کے مشورہ پر عمل کرتے ہوئے آپ کے ہی اخبار میں لڑکی کا رشتہ آیا تھا ، 30 جولائی کو ملاحظہ کیا تھا۔ اس میں خاص کر شادی معیاری کی جائے گی لکھا ہوا تھا۔ میں وہاں میرے لڑکے کا رشتہ بھیجا۔ لڑکا MBA ہے ، رشتے کی بات چلی میں لڑکی کو دیکھا پسند کیا ( آپ کے مشورہ کے مناسبت سے ) صورت شکل نہیں دیکھا رنگ نہیں دیکھا، صرف خاندانی شرافت، نیک سیرت، دیندار پڑھی لکھی لڑکی کو پیش نظر رکھا۔ لڑکی والوں سے بات کرکے جواب دیا کہ ہم لوگ بغیر کسی لین دین ، بغیر کسی رسوم کے شادی کریں گے جس میں کسی قسم کی شرط یا مطالبہ نہیں ہوگا۔ مانجے نہیں، سانچق،مہندی  اور جمعگی نہیں ہوگی۔ فنکشن کا مطالبہ نہ مہمانوں کی تعداد کا نہ گاڑی وغیرہ کا مطالبہ ہوگا۔ صرف نکاح اور ولیمہ ہوگا۔ وہ لوگ کھانا دینے کیلئے اپنی طرف سے پیشکش کئے تب میں نے بولا کیوں غیر ضروری خرچہ کرتے، آسان جو کام ہورہاہے وہ کریں مگر دینے کیلئے وہ خود راضی ہوئے۔ بہر حال معیاری شادی کرنے کا ارادہ رکھے اور اخبار میں بھی اپنے گھر میںبھی دیئے مگر میں کسی قسم کا مطالبہ نہیں کیا۔ آپ کے مشورہ پر عمل کرتے ہوئے صرف دو دن کی شادی رہی۔ بغیر کسی پریشانی کے سکون کے ساتھ دونوں طرف سے ہر کام اچھا ہوکر دونوں کی رضامندی سے شادی ہوگئی۔اللہ تعالیٰ اس کا اجر و ثواب ضرور دے گاآمین! انشاء اللہ ہم لوگ دعاء گو ہیں۔

TOPPOPULARRECENT