Saturday , December 16 2017
Home / ہندوستان / نکسلائٹس کے حامی پروفیسر سائی بابا کی خود سپردگی

نکسلائٹس کے حامی پروفیسر سائی بابا کی خود سپردگی

ناگپور، 26 ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام) ماویسٹوں کے ساتھ تعلقات کے الزام میں معطل شدہ پروفیسر جی این سائی بابا نے آج ممبئی ہائی کورٹ ناگپور بنچ کی ہدایت کے مطابق اپنے آپ کو سنٹرل جیل حکام کے حوالے کردیا ۔ جیل کے ذرائع نے بتایا کہ سائی بابا کی ضمانت پر رہائی 31 دسمبر تک تھی لیکن انہوں نے کل شب میں جیل واپس آگئے ۔ قبل ازیں 23 دسمبر کو ہائی کورٹ بنچ نے ان کی باقاعدہ ضمانت کی درخواست کو مسترد کردیا تھا اور اندرون 24 گھنٹے خود سپردگی اختیار کرنے کی ہدایت دی تھی ۔ جسٹس ارون چودھری نے ضمانت پر رہائی کی مدت میں توسیع سے انکار کرتے ہوئے پولیس کو ہدایت دی تھی کہ اگر وہ اندرون 2 یوم خود سپردگی اختیار نہیں کریں گے تو فی الفور گرفتار کرلیا جائے ۔ عدالت نے سائی بابا کی میڈیکل رپورٹ کا بھی مشاہدہ کیا جس میں یہ واضح کیا گیا ہے کہ ناگپور جیل میں سائی بابا کو مناسب طبی سہولیات فراہم کی جارہی ہیں ۔ دونوں ٹانگوں سے معذور پروفیسر کے وکیل نے صحت کی بنیاد پر ان کی ضمانت میں توسیع کی درخواست کی تھی ۔

TOPPOPULARRECENT