Saturday , December 15 2018

نکسلائٹس ہتھیار ڈال دیں تو حکومت بات چیت کیلئے تیار

نئی دہلی 12 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام)ماؤسٹوں سے تشدد کا راستہ ترک کرنے کی خواہش کرتے ہوئے مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے آج کہا کہ حکومت نکسلائٹس سے بات چیت کیلئے تیار ہیں بشرطیکہ وہ ہتھیار ڈال دیں اور بات چیت کی میز پر آجائیں ۔ وہ ایک پریس کانفرنس سے خطاب کررہے تھے ۔ انہوں نے واضح طور پر کہا کہ بائیں بازو کے انتہا ء پسندوں سے تشدد ترک ک

نئی دہلی 12 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام)ماؤسٹوں سے تشدد کا راستہ ترک کرنے کی خواہش کرتے ہوئے مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے آج کہا کہ حکومت نکسلائٹس سے بات چیت کیلئے تیار ہیں بشرطیکہ وہ ہتھیار ڈال دیں اور بات چیت کی میز پر آجائیں ۔ وہ ایک پریس کانفرنس سے خطاب کررہے تھے ۔ انہوں نے واضح طور پر کہا کہ بائیں بازو کے انتہا ء پسندوں سے تشدد ترک کرنے کی صورت میں بات چیت ممکن ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی کے انتخابی منشور میں جو بھی وعدے کئے گئے تھے وہ اُس کی تکمیل کررہے ہیں۔ قول اور عمل میں کوئی تضاد نہیں ہے ۔ پاکستان سے آئندہ سارک کانفرنس کے موقع پر نیپال میں بات چیت کے بارے میںانہوں نے کہا کہ اگر پڑوسی متوقع خطوط پر کام کرنے تیار ہوں تو بات چیت کیوں نہیں ہوسکتی۔

TOPPOPULARRECENT