Sunday , January 21 2018
Home / ہندوستان / نکسلائیٹس سالانہ 140 کروڑ روپئے بٹوررہے ہیں : حکومت

نکسلائیٹس سالانہ 140 کروڑ روپئے بٹوررہے ہیں : حکومت

نئی دہلی۔ 10 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) حکومت نے آج کہا کہ نکسلائیٹس نے زبردستی رقومات کی وصولی کے ذریعہ سالانہ 140 کروڑ روپئے وصول کئے ہیں۔ مختلف ذرائع سے نکسلائیٹس دولت بٹور رہے ہیں۔ اس طرح 10 سال کے دوران نکسلائیٹس کی انتہا پسندانہ سرگرمیوں کی وجہ سے 5,024 شہری ہلاک ہوئے ہیں۔ ان میں زیادہ تر قبائیلی افراد ہیں۔ بائیں بازو انتہا پسندانہ گروپ

نئی دہلی۔ 10 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) حکومت نے آج کہا کہ نکسلائیٹس نے زبردستی رقومات کی وصولی کے ذریعہ سالانہ 140 کروڑ روپئے وصول کئے ہیں۔ مختلف ذرائع سے نکسلائیٹس دولت بٹور رہے ہیں۔ اس طرح 10 سال کے دوران نکسلائیٹس کی انتہا پسندانہ سرگرمیوں کی وجہ سے 5,024 شہری ہلاک ہوئے ہیں۔ ان میں زیادہ تر قبائیلی افراد ہیں۔ بائیں بازو انتہا پسندانہ گروپس سے تعلق رکھنے والے افراد نے صنعت کاروں، تاجروں، کنٹراکٹرس خاص کر تانڈہ پٹہ، کنٹراکٹرس، ٹرانسپورٹرس سرکاری ملازمین سے ’’لیوی‘‘ کی شکل میں زبردستی رقومات وصول کی ہیں۔ نکسلائیٹس کی جانب سے زبردستی رقومات کی وصولی کی درست تعداد بتانا مشکل ہے۔

راجیہ سبھا میں ایک تحریری جواب دیتے ہوئے مملکتی وزیر داخلہ پرتیبھا بھائی چودھری نے کہا کہ سی پی آئی ماؤسٹ کی جانب سے مختلف وسائل کے ذریعہ سالانہ 140 کروڑ روپئے حاصل کئے جارہے ہیں۔ نکسلائیٹس کی جانب سے شہریوں کی ہلاکت کے بارے میں وزیر نے بتایا کہ ماؤسٹوں نے زیادہ تر دیہی عوام کو ہلاک کیا ہے۔ ان میں قبائیلی طبقہ کے لوگوں کی اکثریت ہے۔ معصوم شہریوں کے ساتھ زور زبردستی کرنا، جنسی ہراسانی اور بچوں کو زبردستی نکسلزم میں شامل کرنے کے واقعات ہوئے ہیں۔ چودھری نے مزید کہا کہ نکسلائیٹس کی جانب سے قبائیلی خواتین کیڈرس کے خلاف بھی جنسی ہراسانی کے واقعات عام ہیں۔ اڈیشہ، مہاراشٹرا ، بہار، جھارکھنڈ اور دیگر ریاستوں کے خودسپردگی اختیار کرنے والی خاتون ماؤسٹوں کا کہنا ہے کہ ان کے ساتھ جنسی زبردستی کی جاتی ہے۔ عصمت ریزی، زبردستی شادیاں اور سینئر مرد سی پی آئی ماؤسٹوں کی جانب سے ہراسانی کی جاتی ہے۔ یہ بھی الزامات ہیں کہ سی پی آئی ماؤسٹ کی جو خواتین حاملہ ہوتی ہیں، انہیں ان کی مرضی کے خلاف اسقاط حمل کیلئے مجبور کیا جاتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT